اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان آزاد تجارت کے معاہدے پر دست خط

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسرائیل اور متحدہ عرب امارات نے اتوار کے روز آزاد تجارت کے معاہدے پر عمل درآمد کے لیے دستاویز پردست خط کیے ہیں۔اس کے تحت دونوں ممالک کے درمیان تجارت کی جانے والی قریباً 96 فی صد اشیاء پرمحصولات میں کمی یا ان کا خاتمہ کیا گیا ہے۔

دونوں ممالک نے پہلی مرتبہ گذشتہ سال مئی میں معاہدہ طے کیا تھا۔اس میں 2020 میں امریکاکی ثالثی میں طے شدہ معاہدۂ ابراہیم کے تحت تعلقات معمول پر آنے کے بعد دو طرفہ تجارت کو فروغ دینے کاعزم کیا گیا تھا۔

اسرائیلی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس معاہدے سے اسرائیلی کمپنیوں کو متحدہ عرب امارات میں سرکاری ٹینڈرز تک رسائی حاصل کرنے کی بھی اجازت ملے گی۔

اسرائیل کی طرف سے وزیرخارجہ ایلی کوہن اور یو اے ای کی طرف سے اس کے سفیرمحمد الخاجہ نے آزاد تجارت کے ذیلی ٹیرف معاہدے پردست خط کیے ہیں۔ایلی کوہن نے اس موقع پرکہا کہ اس سے متحدہ عرب امارات کےساتھ ’’رابطے مضبوط ہوں گے‘‘اوراسرائیل مزید عرب ممالک کے ساتھ تعلقات کو معمول پرلانے کے لیے کام کررہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں