سعودی پبلک پراسیکیوٹر کا ریاض میں دنگا فساد کرنے والے شخص کی گرفتاری کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے پبلک پراسیکیوٹر الشیخ سعود بن عبداللہ المعجب نے دارالحکومت ریاض میں ایک اوباش شخص کو اپنی گاڑی دوسرے افراد کی گاڑیوں سے ٹکرانے اور فائرنگ کرنے میں ملوث ہونے پر فوری گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے۔

پراسیکیوٹر جنرل کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مملکت میں کسی کو قانون سے کھیلنے اور شہریوں کی جان ومال کو خطرے میں ڈالنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

پراسیکیوٹر نے اس واقعے پر کارروائی کا حکم اس وقت دیا جب سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو سامنے آئی۔ ویڈیو میں ایک شخص کو دیکھا جا سکتا ہے کہ وہ اپنی کار دوسری گاڑیوں سے قصدا ٹکرانے کے ساتھ فائرنگ بھی کررہا ہے۔

پبلک پراسیکیوشن کے ایک سرکاری ذریعے نے بتایا کہ پبلک پراسیکیوٹر نے ویڈیو کی تصدیق کرنے اور اس کی تحقیقات کے لیے فوری کارروائی کا حکم دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق کہ ریاض میں سر عام دنگا فساد کرنے والے شخص کے خلاف فوج داری قانون کے تحت کارروائی کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں