سعودی عرب:اعتدال اورٹیلی گرام نے انتہاپسندی پرمبنی 60 لاکھ سے زیادہ مواد ہٹادیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کےعالمی مرکزبرائے انسداد انتہاپسندنظریات (گلوبل سنٹرفارکمبیٹنگ انتہاپسند نظریات) (اعتدال) اور ٹیلی گرام نے 2023 کی پہلی سہ ماہی میں انتہاپسندی پرمبنی 60 لاکھ سے زیادہ مواد کو ہٹا دیا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق اعتدال اورٹیلی گرام کے اشتراک سے یکم جنوری سے 31 مارچ تک شدت پسند نظریات کو فروغ دینے پر داعش، القاعدہ اور ہیئت تحریرالشام سے تعلق رکھنے والے 6,004,218 مواد کو حذف کیا گیا اور مجموعی طور پر 1,840 چینلوں کو بند کیا گیا ہے۔

ایس پی اے کی جانب سے شیئر کیے گئے ایک انفوگرافک کے مطابق نشانہ بنایا جانے والا مواد عربی زبان میں تھااوریہ آڈیو ریکارڈنگز، پی ڈی ایف فائلوں اور ویڈیوز کی صورت میں تھا۔

اعتدال کی ٹیم نے ٹیلی گرام پرتین دہشت گرد تنظیموں کی سرگرمیوں کی نشان دہی اور نگرانی کی۔اس نے ہیئت تحریرالشام سے تعلق رکھنے والے477 چینلزپر2,773,902 انتہا پسندانہ مواد، داعش سے تعلق رکھنے والے 1,040 چینلز پر اسی طرح کے 1,807,215 ٹوٹے اور القاعدہ سے تعلق رکھنے والے 323 چینلز پر 1,423,101 مختلف مواد کی نشان دہی کی اورانھیں ہٹادیا ہے۔

ایس پی اے کی رپورٹ کے مطابق،انفوگرافک سے یہ بھی پتاچلتا ہے کہ 9 جنوری کو ٹیلی گرام پر نشریاتی سرگرمیوں میں عروج دیکھاگیا۔اس روز اس پر 451،911 مواد شیئر کیا گیا اور اس کا حوالہ دیا گیا۔

دوسری جانب، 27 مارچ کو نئے اکاؤنٹس بنانے کی غیرمعمولی سرگرمی ملاحظہ کی گئی اورایک ہی دن میں 101 نئے چینل بنائے گئے تھے۔

فروری 2022 میں اعتدال اور ٹیلی گرام کے درمیان تعاون کے آغاز سے لے کرمارچ 2023 تک مجموعی طورپر21,026,169 انتہا پسند مواد کو ہٹایاجاچکا ہے اورانتہاپسندوں کے 8,664 چینلزبند کیے جاچکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں