سعودی عرب: پراکسی بھرتی کرنے والوں کو 100,000ریال جرمانہ اور 6 ماہ قید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

جنرل ڈائریکٹوریٹ آف پاسپورٹ نے دوسروں کے لیے غیر ملکی پراکسی کارکنوں کی بھرتی پر جرمانے کے اطلاق کی یاد دہانی کی ہے۔

حکام نے اپنے ایک ٹویٹ میں وضاحت کی کہ ایسے افراد کا آجر جو اپنے کارکنوں کو دوسروں کے لیے یا ان کے کسی خاص اکاؤنٹ کے لیے کام کرنے کے قابل بناتا ہے، اسے 100,000 ریال تک جرمانے اور 6 ماہ تک کی قید کی سزا دی جائے گی۔

پاسپورٹ حکام نے تصدیق کی کہ مذکورہ جرمانے کے علاوہ پانچ سال تک کی مدت کے لیے بھرتی پر پابندی عائد کی جائے گی۔

یہ اقدام سعودی عرب میں ملازمتوں اور کام کرنے کے مواقع میں شفافیت کے معیار کو یقینی بنانے کے لیے کیا گیا ہے۔

گذشتہ چند برسوں میں سعودی حکام نے لاکھوں کی تعداد میں رہائش، کام اور سرحدی حفاظتی ضوابط کی خلاف ورزی کرنے والوں کو ہٹا دیا اور بہت سے غیر ملکی ملازمین کو مملکت سے باہر بھیج دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں