ناقابل یقین! ہزاروں فٹ بلندی پرپائلٹ پرکیا گذری؟جب اس کے پاؤں پرخطرناک کوبرا چڑھ آیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

جنوبی افریقہ میں ایک پائلٹ 11000 فٹ کی بلندی پر پرواز کرتے ہوئے اپنے پاس رینگنے والے خطرناک ترین سانپوں میں سے ایک کو دیکھ کر دنگ رہ گیا۔

مقامی اخبارات کے مطابق روڈولف ایراسمس ایک نجی طیارہ اڑارہا تھا جس میں 4 مسافر سوار تھے۔ یہ طیارہ اس وقت 3000 میٹر سے زیادہ کی بلندی پر تھا جب پائلٹ کو اپنی ٹانگ پر کچھ سردی محسوس ہوئی۔

پہلے تو پائلٹ کو لگا کہ اسے محسوس ہونے والی یہ ٹھنڈک اس کی پانی کی بوتل سے نکلنے والے پانی کی ہے مگر جب اس نے چیک کیا تو اسے ایک دم سےجھٹکا لگا۔ اس کے سامنے ڈیڑھ میٹر لمبا انتہائی زہریلا سانپ تھا جو واپس اس کی سیٹ کے نیچے گھس گیا۔

سانپ کی وجہ سے پائلٹ کو ہنگامی لینڈنگ کرنا پڑی۔ اس نے طیارے میں موجود مسافروں کو بتایا کہ "میری سیٹ کے نیچے ایک سانپ ہے، یہ کاک پٹ میں ہے، لہذا ہم جلد از جلد (ہنگامی) لینڈنگ کریں گے۔"

پائلٹ نے متعلقہ حکام کو در پیش اس ہنگامی صورتحال سے آگاہ کیاجس پراسے قریبی ہوائی اڈے پر اترنے کی اجازت دی گئی۔

لینڈنگ کے بعد اور مسافروں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے بعد پائلٹ جہاز کے بازو پر کھڑا ہوا اور اپنی سیٹ کو آگے بڑھایا۔ اس نے دیکھا کہ سانپ ابھی تک اپنی جگہ پر بیٹھا ہوا ہے۔ پائلٹ نے اس کے بارے میں کہا کہ "یہ (پرواز میں) بہت اچھا ساتھی تھا۔ )"

جنوبی افریقہ کے سول ایوی ایشن کمشنر بوبی خوزا نے اس مشکل صورتحال میں پائلٹ کی کارکردگی کو سراہا۔

انہوں نے کہا کہ وہ ایک عظیم پائلٹ ہیں جو طیارے میں موجود تمام مسافروں کی جانیں بچانے میں کامیاب رہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں