بے وقوف افراد اور ان کے فیصلوں سے ہم تیسری عالمی جنگ میں پڑ سکتے: ٹرمپ

ہماری سرحدوں پر حملہ ہوچکا، ہم عالمی کرنسی کے معیار کے طور پر اپنا ڈالر کھونے والے ہیں: سابق امریکی صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جمعہ کو امریکی صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ پر کڑی تنقید کی ہے۔ منگل کو ٹرمپ پر مقدمہ کی سماعت شروع ہوئی تھی ۔ اس کے دو روز کے بعد سابق صدر نے اپنے سوشل نیٹ ورک ’’ٹروتھ سوشل‘‘ پر لکھا کہ ’’ہم زوال پذیر قوم ہیں۔ ایک ناکام قوم ہیں‘‘

اپنی اشتعال انگیز پوسٹ میں ٹرمپ نے مزید کہا ہم جس اچھے امریکہ کو جانتے ہیں، وہ اتنی تیزی سے کھو رہا ہے کہ تاریخ کی سب سے نااہل انتظامیہ کے زیر انتظام باقی ڈیڑھ سال کے اختتام پر ہمارے پاس شاید کوئی ملک باقی نہ رہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہماری سرحدوں پر یلغار ہے، ہم عالمی کرنسی کے معیار کے طور پر اپنا ڈالر کھونے والے ہیں اور بیوقوف لوگوں اور فیصلوں کی وجہ سے ہم تیسری جنگ عظیم میں ختم ہو سکتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا صرف وہ چیزیں جو یہ اچھی طرح کرتے ہیں وہ انتخابی فراڈ، گندی مہم اور نظام انصاف کا غلط استعمال ہے۔ ٹرمپ نے ان الفاظ سے بات کا اختتام کیا "ہم زوال پذیر قوم ہیں... ایک ناکام قوم!!!"

62
62

امریکی "فاکس نیوز" چینل نے کہا ہے کہ سابق امریکی صدر ٹرمپ کے مقدمے کی نگرانی کرنے والے نیویارک شہر کے جج کو جان سے مارنے کی دھمکیاں موصول ہوئی ہیں جس کے بعد ان کے ساتھ سکیورٹی ٹیم کو تعینات کردیا گیا ہے۔

مین ہٹن سپریم کورٹ کے جسٹس جوآن مرچان کے خلاف دھمکیاں تقریباً ایک ہفتہ قبل شروع ہوئی تھیں۔ منگل کو ٹرمپ کے خلاف تاریخی فرد جرم میں 34 الزامات لگائے گئے ہیں۔ٹرمپ مجرمانہ الزامات کا سامنا کرنے والے پہلے سابق امریکی صدر ہیں۔ انہوں نے الزامات کو مسترد کیا ہے۔

یاد رہے جج مرچان نے ٹرمپ آرگنائزیشن کے مقدمے کی صدارت بھی کی تھی۔ اس مقدمہ میں کمپنی کو ٹیکس فراڈ کے 17 الزامات میں 1.6 ملین ڈالر جرمانے کا مجرم پایا گیا۔ ٹرمپ نے سوشل میڈیا پر مرچان اور ان کے خاندان کو ٹرمپ سے نفرت کرنے والے قرار دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں