’ایپل‘ کے اسٹور کو چور پڑ گئے، واردات قریبی باتھ روم میں سوراخ کر کے انجام دی گئی

چوری کیے گئے ایپل کے 436 آلات کی کل مالیت تقریباً پانچ لاکھ ڈالر ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا میں مشہور ٹیکنالوجی کمپنی ’ایپل‘ کے ایک اسٹور میں چوروں نے پیشہ وارانہ انداز میں گھس کر چوری کی واردات کی اور تقریبا پانچ لاکھ ڈالر مالیت کے موبائل فون اور پرزہ جات لوٹ لیے۔

چور حیران کن طور پر ایک قریبی باتھ روم کی دیوار کو سوراخ کرکے مشہور کمپنی کے اسٹور میں داخل ہوئے اور اپنا کوئی نشان چھوڑے بغیر ایک بڑی چوری کی واردات کی۔ یہ واقعہ امریکی شہر ’سیاٹل‘ میں پیش آیا۔

واشنگٹن ریاست میں لن ووڈ پولیس ڈیپارٹمنٹ نے اعلان کیا کہ چوروں نے ایلڈر ووڈ مال میں ایپل اسٹور سے 400 سے زیادہ ڈیوائسز چرا لیں، جن کی کل مالیت تقریباً پانچ لاکھ ڈالر ہے۔

لین ووڈ پولیس ڈیپارٹمنٹ کی کمیونیکیشن ڈائریکٹر مارین میکے نے بدھ کو ایک بیان میں کہا کہ تقریباً 436 ایپل ڈیوائسز چوری کی گئیں جن کی مجموعی قیمت 500,000 ڈالر تھی۔ ان میں آئی فونز، آئی پیڈز اور ایپل گھڑیاں شامل ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ "ابھی تک چوروں کے کوئی فنگر پرنٹس نہیں ملے ہیں۔ چورماسک پہن کر داخل ہوئے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ "کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا ہے لیکن تفتیش کار فی الحال چوروں کا پتا چلانے کی کوشش کر رہے ہیں۔"

اخبار "یو ایس اے ٹوڈے" کی رپورٹ کے مطابق اہلکار نے کہا کہ جرم ایک منظم اور پیچیدہ عمل معلوم ہوتا ہے۔

دیوار میں 24x 18 کا سوراخ

دوسری طرف یسپریسو مشین شاپ کے مالک نے کہا کہ اس نے پانچ سال میں اس طرح کی کوئی چیز نہیں دیکھی۔

سیئٹل کافی شاپ کے ریجنل مینیجر ایرک مارکس نے کہا کہ "چوروں نے ایپل اسٹور کے پچھلے کمرے کی دیوار میں 24" بائی 18" کا سوراخ کیا۔ "میں حیران ہوں کہ چوروں کاہدف ایپل کے سامان تک رسائی تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ توڑ پھوڑ کی مرمت میں سٹور پر تقریباً 2,000 ڈالر لاگت آئے گی۔"

ایپل سٹور کے ملازمین کو اگلے دن کام پر جانے تک اس بات کا کوئی اندازہ نہیں تھا کہ سامان چوری ہو گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں