سعودی ولی عہد اور امریکی مشیر برائے قومی سلامتی کا ایران، یمن صورتحال پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی مشیر برائے قومی سلامتی جیک سلیوان نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے یمن میں جاری پیش رفت اور ایران کے جوہری پروگرام کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا۔

واشنگٹن کی جانب سے جاری ایک بیان میں بتایا گیا کہ"جیک سلیوان اور سعودی ولی عہد نے خطے میں کشیدگی کے خاتمے کے حوالے سے پیش رفت پر تبادلہ خیال کیا۔ ٹیلی فون پر ہونے والی گفتگو میں انہوں نے ایران سمیت دیگر خطرات سے متعلق بھی بات چیت کی۔"

اس رابطے سے قبل گذشتہ ہفتے امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کے ڈائریکٹر بل برنز نے بھی سعودی عرب کا دورہ کیا تھا۔

وائٹ ہائوس کے بیان کے مطابق "جیک سلیوان نے یمن میں گذشتہ ایک برس کے دوران ہونے والی پیش رفت کو سراہا۔ اس ایک سال کے دوران اقوام متحدہ کی ثالثی میں ہونے والے جنگ بندی معاہدے کے نتیجے میں لڑائی بہت محدود ہو گئی تھی۔"

جیک سلیوان وائٹ ہاؤس میں ایک نیوز بریفنگ سے خطاب کر رہے ہیں: رائیٹرز
جیک سلیوان وائٹ ہاؤس میں ایک نیوز بریفنگ سے خطاب کر رہے ہیں: رائیٹرز

جیک سلیوان نے سعودی عرب کی جانب سے جنگ کے خاتمے کے لئے جامع کوششوں کا خیر مقدم کرتے ہوئے امریکہ جانب سے ہر ممکن تعاون کی پیشکش کی۔

امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق امریکی نمائندہ خصوصی برائے یمن ٹم لینڈرکنگ کو نئے جامع امن معاہدے کی کوششوں میں مدد کے لئے خلیج کے دورہ پر بھیجا گیا ہے۔

امریکی نمائندہ اس دورے کے دوران یمنی، سعودی اور دیگر بین الاقوامی اتحادیوں سے ملاقاتیں کریں گے تاکہ دیر پا جنگ بندی کا معاہدہ طے کیا جاسکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں