معمولی بات پر مصری خاتون نے شوہر پر چاقو سے حملہ کردیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر میں ’’القلیوبیہ‘‘ گورنری کے شہر ’’العبور‘‘ کے بعض رہائشیوں نے جمعہ کی شام افطاری سے قبل مغرب کی اذان سننے کے لیے گھر کی کھڑکیاں کھولیں تو انہیں اذان کے بجائے اپنے پڑوسی کی چیخیں سنائی دیں۔
پڑوسی باہر بھاگے اور محمد کی آواز سن کر حیران رہ گئے۔ اس سے قبل وہ محمد کی اپنی بیوی سے جھگڑے کے عادی ہو چکے تھے مگر اس مرتبہ محمد کے خون سے جگہ بھر چکی تھی۔
شوہر نے تصدیق کی کہ اس کی بیوی نے اس کے بچے کے باہر جانے سے پہلے اسے چھرا گھونپ دیا۔ بیوی نے اس بات کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ اس کے شوہر نے خود کو کچن میں چاقو سے مارا ہے اور اسے گھر سے باہر نکال دیا۔
عینی شاہدین نے بتایا کہ شوہر کے ہاتھ اور پیٹ میں چھریوں کے وار کیے گئے تھے۔ وہ اپنی بیوی کی سزا سے بچنے کے لیے چیخ رہا تھا۔
کوما سے بیدار ہونے کے بعدمحمد نے تصدیق کی کہ اس کی اور اس کی بیوی کے درمیان افطاری سے پہلے جھگڑا ہوا کیونکہ میں نے اسے کہا تھا کہ وہ بچے کو لے کر اپنے والدین کے پاس چلی جائے جس پر بیوی ناراض ہوگئی اور اسے جان سے مارنے کی دھمکی دی۔ اس دوران وہ باورچی خانے سے چاقو لے آکر آئی اور مجھ پر وار کردئیے۔
واضح رہے کہ شوہر نے پولیس سٹیشن جاکر رپورٹ درج کرا دی اور رپورٹ کے ساتھ ہسپتال کی میڈیکل رپورٹ منسلک کردی ہے۔ محمد نے بیوی پر ’قتل کی کوشش‘ کا الزام لگایا۔
شوہر کے اہل خانہ کے مطابق واقعہ کے بعد بیوی آئی اور گھر کا فرنیچر اپنے قبضے میں لے لیا ہے۔ شوہر نے اس بات کی تصدیق کی کہ اس کی شادی جو دو سال تک نہیں چل سکی تھی، مسائل سے بھری ہوئی تھی۔ پڑوسیوں نے کہا ہے کہ بیوی نے اپنے شوہر پر حملہ کرنے کے بعد فرار ہونے کی کوشش کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں