ایرانی پاسداران انقلاب کاخلیج میں اسمگل شدہ ایندھن لے جانے والے بحری جہازپرقبضہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب نے ساڑھے چودہ لاکھ (1.45 ملین) لیٹر اسمگل شدہ ایندھن لے جانے والے ایک غیرملکی بحری جہاز کو قبضے میں لے لیا ہے۔

ایران کی نیم سرکاری خبررساں ایجنسی تسنیم نے اتوار کوجنوب مغربی صوبہ بوشہر کے چیف جسٹس مہدی مہرانگیز کے حوالے سے بتایا کہ جہاز کے عملہ کے 10 افراد کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔البتہ انھوں نے عملہ کے ارکان کی قومیت کے بارے میں کوئی تفصیل فراہم نہیں کی۔

مہرانگیز نے کہا کہ عدالتی حکام فی الحال عملہ کے ارکان کی مناسب سزا کا تعیّن کرنے کے لیے معاملے کا جائزہ لے رہے ہیں۔انھوں نے مزید بتایا کہ جہاز خلیجی ممالک میں سے ایک کی طرف جا رہا تھا۔

ایران زرتلافی (سب سڈی) اور اپنی قومی کرنسی کی قدرمیں نمایاں کمی کی وجہ سے عالمی سطح پر ایندھن کی سب سے کم قیمتوں کے لیے جاناجاتا ہے۔وہ اپنی سرحدوں سے ہمسایہ ممالک اور خلیجی ریاستوں کو سمندری راستوں کے ذریعے ایندھن کی بڑے پیمانے پراسمگلنگ سے نبردآزما ہے۔

ایران سے پڑوسی ملک پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں بھی گاڑیوں اور سمندری راستے سے تیل کی بھاری مقدار اسمگل کی جاتی ہے لیکن دونوں ملکوں کے حکام تیل کی اسمگلنگ کے اس دھندے پرقابو پانے میں ناکام ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں