اردنی جوڑے کے ہاں 27 سال بعد بچے کی پیدائش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

27 سال کے صبر اور انتظار کے بعد اردن کی ایک خاتون نے درجنوں ناکام کوششوں کے بعد آخر کار اپنے پہلے بچے کی پیدائش میں کامیابی حاصل کرلی۔ خاتون کی نگرانی کرنے والے ڈاکٹر کے مطابق یہ دنیا بھر میں اپنی نوعیت کا ایک نادر واقعہ ہے۔

اردنی میڈیا کے مطابق سینئر کنسلٹنٹ گائناکالوجسٹ اور آئی وی ایف کے ماہر ڈاکٹر ہلال ابو غوش نے دارالحکومت عمان میں انکشاف کیا کہ مجدولین نامی بچے کی پیدائش آئی وی ایف کے ذریعے حاملہ ہونے کی 15 کوششوں اور 27 سال کی شادی کے بعد ہوئی۔ یہ اپنی نوعیت کی ایسا پہلا واقعہ ہے۔

ابو غوش نے بتایا کہ یہ ایک عالمی واقعہ اور کامیابی ہے کیونکہ دنیا میں پہلی مرتبہ ایک جوڑے نے شادی کے 27 سال بعد اور عطیہ دہندگان کے بغیر بچے کو جنم دیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ شوہر کی عمر 55 سال اور بیوی کی عمر 44 سال ہے۔

ان تمام عوامل کی روشنی میں بچے کی پیدائش کو ایک منفرد طبی کارنامہ سمجھا جارہا ہے کیونکہ شادی کے 27 سال بعد عطیہ دہندگان کے بغیر بچے کی پیدائش کا کوئی کیس سامنے نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیدائش کی کامیابی میں نفسیاتی اور سماجی عوامل نے اہم کردار ادا کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں