بیٹے نے دولت میرے اکاؤنٹ میں منتقل کرنےکامجھے نہیں بتایا:اشرف حکیمی کی والدہ کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فٹبال اسٹار اشرف حکیمی اور ہبہ عبوک کی طلاق کے اثرات اب بھی بین الاقوامی پریس پر چھائے ہوئے ہیں۔ خاص طور پر جب اشرف حکیمی کی اہلیہ نے طلاق کے بعد حکیمی کی آدھی دولت اور جائیداد کا مطالبہ کیا تو اس کے بعد حیران کن انکشاف سامنے آیا کہ اشرف حکیمی کے نام پر تو کچھ ہوتا ہی نہیں بلکہ اپنی تمام دولت اپنی ماں کے سپرد کر دیتا ہے۔

حکیمی کی والدہ نے اپنا پہلا رد عمل جاری کیا ہے جس میں اس نے کہا ہے کہ "میرے بیٹے نے مجھے اپنی دولت کی منتقلی کے بارے میں مطلع نہیں کیا تھا"۔

ہسپانوی اخبار’کواٹرو‘ کے مطابق حکیمی کی والدہ کا کہنا ہے کہ اگر وہ کوئی اقدام کرتا ہےتو یہ خود کو بچانے کے لیے ہے۔

اس نے مزید کہا کہ "مجھے اس معاملے کا کوئی علم نہیں ہے لیکن اگر یہ سچ ہے تو کیا مسئلہ ہے؟ اگر میرا بیٹا ایسا نہیں کرتا تو وہ اس سے چھٹکارا نہیں پا سکے گا"۔ ان کا اشارہ ھبہ عبوک کی طرف تھا۔

ملین ڈالر ایک ماہ

غیرملکی میڈیا نے انکشاف کیا کہ پیرس سینٹ جرمین کے محافظ کی مجموعی مالیت جو اس نے اپنی اہلیہ سے چھپائی 24 ملین ڈالر ہے۔

حکیمی کو فرانسیسی ٹیم سے ماہانہ تقریباً ایک ملین ڈالر ملتے ہیں اور اس میں سے صرف 20 فیصد اپنے پاس رکھتے ہیں۔ جب کہ ان کی باقی تنخواہ یا تقریباً 800,000 ڈالر ماہانہ براہ راست اپنی والدہ کے بینک اکاؤنٹ میں جاتی ہے۔

ہسپانوی اداکارہ نے ایک نوجوان فرانسیسی خاتون کے ساتھ زیادتی کے الزام کے بعد حکیمی سے طلاق مانگ لی تھی۔ جب اس نے اس کی آدھی دولت کا مطالبہ کیا تو اس نے دریافت کیا کہ اس کے پاس کچھ بھی نہیں ہے۔ اس کی تمام جائیداد بشمول زیورات اور مال و دولت اس کی ماں کے نام پر رجسٹرڈ ہے۔

یہ قابل ذکر ہے کہ حکیمی افریقہ میں چھٹے سب سے زیادہ معاوضہ لینے والے کھلاڑی ہیں۔ گذشتہ سال قطر میں 2022 فیفا ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں مراکش کی قیادت کے بعد سے وہ بہت مقبول ہو گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں