سوڈانی الہلال ٹیم کے کپتان کی گھر بیٹھی جواں سال بیٹی کے دل میں گولی پیوست، ماں زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سوڈان میں جنگ بندی کے باوجود نہ تھمنے والی خونریز جھڑپوں کے جلو میں سوڈان کی الہلال فٹبال ٹیم کے کپتان کی بیٹی ڈاکٹر آلاء فوزی المرضی کو ان کے گھر کے اندر گولی لگ گئی، یہ گولی شہر میں ہونے والی اندھا دھند فائرنگ کا نتیجہ لگتی ہے۔

نوجوان لڑکی کام سے واپس آ رہی تھی کہ گھر کی کھڑکی سے لگنے والی گولی سے وہ ہلاک ہو گئی۔ فائرنگ کے اس واقعے میں آلاء کی والدہ شدید زخمی ہوئی ہیں۔

العربیہ/الحدث کے مطابق بیٹی کے قتل پر سوگوار والد نے وضاحت کی کہ اس کی بیٹی کام سے واپس آنے کے بعد نامعلوم گولی سے ہلاک ہو گئی۔

سوڈانی کریسنٹ ٹیم کے کپتان نے بات جاری رکھی کہ اس کی بیٹی آٹھویں لین ہسپتال میں کام کر رہی تھی جہاں وہ دن بھر ڈیوٹی دینے کے بعد گھر لوٹی تھیں کہ کسی اندھی گولی نے اس کی جان لے لی۔

مقتولہ آلاء کے والد نے بتایا کہ بیٹی اپنے بیڈ روم میں گئی جہاں ایک گولی کھڑکی سے گذر کر اس کے جبڑے میں داخل ہوگئی۔ اس واقعے میں اس کی بیوی بھی گولیاں لگنے سے زخمی ہوئیں۔

ادھر سوشل میڈیا پر سماجی کارکنوں نے خرطوم کی سڑکوں پر درجنوں لاشوں کی موجودگی کی اطلاع دی ہے جنہیں اسی طرح کے واقعات میں گولیاں ماری گئی تھیں یا متحارب دھڑوں کی اندھی فائرنگ سے ان کی موت واقع ہوئی ہے۔

اس ہفتے کے آغاز میں سوڈانی فوج اور باغی سریع الحرکت فورسز کے درمیان جھڑپیں شروع ہونے کے بعد سے دارالحکومت خرطوم خوراک کی قلت، بجلی اور گیس کی طویل لوڈ شیڈنگ اور پینے کے صاف پانی کی قلت کا سامنا کر رہا ہے۔

اس کے علاوہ لڑائی کے نتیجے میں ہسپتالوں میں عملے کو مریضوں اور زخمیوں کی دیکھ بھال میں مشکلات کا سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں