عیدالفطرکی تعطیلات: دبئی میں مفت پارکنگ، میٹرواوربسوں کے نئے اوقات کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

دبئی کی شاہرات اورٹرانسپورٹ اتھارٹی نےعیدالفطرکی تعطیلات کے لیے باقیمت پارکنگ زونزاور پبلک ٹرانسپورٹ کے اوقات کار میں ترمیم کا اعلان کیا ہے۔

نئے اوقات کا اطلاق جمعرات 20 اپریل سے آیندہ چاریا پانچ دن کے لیے ہوگا۔اس کاانحصار چاند کی رؤیت پر ہوگا۔

عوامی پارکنگ

دبئی بھر میں پبلک پارکنگ 20 اپریل سے اتوار یا پیر تک مفت ہوگی۔ تاہم ،ملٹی لیول پارکنگ گیراج اس میں شامل نہیں۔

دبئی میٹرو اوردبئی ٹرام

سرخ اورسبزدونوں دبئی میٹرولائنیں 20،21 اور 22 اپریل (اگلے دن) صبح 5:00 بجے سے رات 1:00 بجے تک چلیں گی۔

دونوں لائنیں اتوار کو صبح 8:00 بجے سے (اگلے دن) رات 1:00 بجے تک چلیں گی۔

ٹرام لائن جمعرات ،20 اپریل سے ہفتہ ، 22 اپریل تک ، صبح 6:00 بجے سے 1:00 بجے (اگلے دن) تک کام کرے گی۔

اتوار،23 اپریل کو ، دبئی ٹرام صبح 9:00 بجے سے (اگلے دن) صبح 1:00 بجے تک چلے گی۔

بسیں اورگاڑیوں کی جانچ

دبئی بھر میں تمام بس اسٹیشن صبح 6:00 بجے سے 1:00 بجے (اگلے دن) تک کام کریں گے۔ میٹرو سے منسلک 'فیڈر' بسیں دبئی میٹروکے اوقات کی پیروی کریں گی۔

تمام انٹرسٹی بس روٹس موجودہ شیڈول کے مطابق کام کرتے رہیں گے۔

عیدالفطر کی تعطیلات کے دوران گاڑیوں کے جانچ مراکزبند رہیں گے۔ آر ٹی اے کا کہنا ہے کہ 3 شوال سے سرکاری اوقات کار دوبارہ شروع ہوں گے۔

آر ٹی اے کے دفاتر

آر ٹی اے کے صارفین مراکز 20 اپریل سے بند رہیں گے اور 4 شوال سے باقاعدہ کاروباری اوقات بحال ہوں گے۔

ام رمول، دیرہ، البرشا، المنارہ، الکیفاف اورآر ٹی اے کے ہیڈآفس میں اسمارٹ سینٹرز چوبیس گھنٹے کام کرتے رہیں گے۔

آرٹی اے نے اپنی سمندری نقل وحمل کی خدمات – ابرا، دبئی فیری، واٹربس، اور واٹر ٹیکسی – کے شیڈول بھی آن لائن شائع کیے ہیں۔

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے خلیجی ممالک کے مسلمانوں سے جمعرات 20 اپریل کو چاند دیکھنے کی اپیل کی ہے۔

متحدہ عرب امارات کی کمیٹی نے چاند دیکھنے والوں سے درخواست کی ہے کہ وہ +97126921166 پر حکام سے رابطہ کریں اور چاند کی رؤیت کی شہادت ریکارڈ کرانے کے لیے قریبی عدالت میں جائیں۔

متحدہ عرب امارات میں وفاقی اور نجی شعبے کے ملازمین کے لیےعیدالفطرکی تعطیلات 20 اپریل سے شروع ہوں گی۔ حکام نے تعطیلات میں 3 شوال تک توسیع کردی ہے جو 23 یا 24 اپریل کو ہوگی، اس کا انحصاراس بات پر ہے کہ رمضان کے 29 یا 30 روزے ہوتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں