برطانیہ کا موبائل فون پر ایمرجنسی الرٹ سسٹم کا تجربہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی حکومت نے آگ اور سیلاب جیسی ہنگامی صورتحال یا موت کے خطرے کی صورت میں عوام کو خبردار کرنے کے لیے ایک نئے الرٹ سسٹم کا تجربہ کیا ہے۔ اس تجربے کے تحت کل اتوار کو مقامی وقت کے مطابق 15:00 بجے موبائل فون پر سائرن بجنے لگے۔

حکومت کی طرف سے شروع کیا گیا یہ الرٹ سسٹم امریکا، کینیڈا، ہالینڈ اور جاپان میں موجودہ سسٹمز سے متاثر ہو کرشروع کیا گیا ہے اور یہ موبائل فون پر پیغامات بھیجنے کی اجازت دے گا تاکہ کسی خطرے کی صورت میں فوری طور پر خبردار کیا جا سکے۔

وزیر اعظم رشی سوناک نے ہفتے کے روز ٹویٹر پر لکھا کہ "آپ جہاں کہیں بھی ہوں ، اتوار کو 15:00 بجے موصول ہوگا۔" انہوں نے مزید کہا کہ "آپ کو موبائل اسکرین پر آواز اور وائبریشن کے ساتھ زیادہ سے زیادہ 10 سیکنڈز کے لیے پیغام موصول ہوگا آپ کو کوئی کارروائی نہیں کرنی پڑے گی۔

حکومت نے دوسری جنگ عظیم کے دوران مشہور برطانوی نعرے کا استعمال کرتے ہوئے تنقید کے جواب میں کہا کہ "پرسکون رہیں اور جاری رکھیں۔" "یہ صرف ایک امتحان ہے۔"

ڈیلی میل نے منگل کو لکھا: "ایک ذہین میں سے کس نے سوچا کہ اتوار کو 15:00 بجے ملک کو گھبرانا اچھا خیال ہے؟" ڈرائیوروں سے کہا گیا کہ وہ ٹیسٹ کے دوران اپنے فون اٹھانے سے گریز کریں اور جو لوگ الرٹس وصول نہیں کرنا چاہتے تھے وہ اپنی ڈیوائس کی سیٹنگز میں انہیں آف کر
سکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں