منی لانڈرنگ کیس:برطانیہ سے 12 کروڑ40 لاکھ ڈالردبئی لے جانے والے11 کھیپے مجرم قرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

برطانیہ سے دبئی میں 10 کروڑپاؤنڈ (124 ملین ڈالر) سے زیادہ نقد رقم اسمگل کرنے والے کوریئرز (کھیپے) کے ایک نیٹ ورک کومقدمے کی سماعت کے بعد قصوروار پایا گیا ہے۔ان کے خلاف منی لانڈرنگ کے سب سے بڑے گھوٹالے کا مقدمہ چلایا گیا ہے۔

برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی (این سی اے) نے بدھ کوبتایاکہ اس نیٹ ورک کے سرغنہ کے ساتھ مجموعی طورپر11 کھیپے مجرم قرار پائے ہیں۔ ایک سال سے بھی کم عرصے میں ان کوریئرز نے 80 سے زیادہ پروازیں پکڑیں۔ان کے ساتھ منشیات کی رقم سے بھرے ہوئے سوٹ کیس تھے۔

یہ کھیپے وٹس ایپ پر سن شائن اورلولی پاپ نامی گروپوں میں بات چیت کرتے تھے۔تفتیش کاروں کاکہنا ہے کہ ان کوریئرز نے بزنس کلاس میں سفرکیا تھاتاکہ روانگی کے وقت کے قریب سامان اور چیک اِن کا فائدہ اٹھایا جا سکے۔

ان کے سفری سوٹ کیسوں میں قریباً 500،000 پاؤنڈ رکھے گئے تھے۔وہ اس رقم کے ساتھ کافی کے دانوں سے بھرے ہوئے تھے یا سراغ رساں کتوں سے ان کی خوشبو کو چھپانے کے لیے ایئرفریشنر کا چھڑکاؤ کیا گیاتھا۔

برطانوی پولیس نے لندن سے دبئی تک منی لانڈرنگ کے راستوں کی تحقیقات کی ہے اور خدشہ ظاہر کیا ہے کہ مجرمانہ رقوم کو ملک سے باہر لے جانے کے بعدان کا سراغ لگانا بہت مشکل ہو جاتا ہے۔

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات ناجائزرقوم کے بہاؤ کی وجہ سے سرخیوں میں رہا ہے اور گذشتہ سال مارچ میں مالیاتی جرائم کے عالمی نگران ادارے نے ملک کوغیرقانونی فنڈز کو بے نقاب کرنے میں ناکام ہونے پر گرے لسٹ میں ڈال دیا تھا۔

تاہم،یواے ای نے اپنے مالیاتی نظام کے اندرچیک اینڈ بیلنس کو بہتر بنانے کے لیے اقدامات کیے ہیں اور مستقبل میں دھوکادہی کی کوششوں کو روکنے کے لیے ایف اے ٹی ایف کے ساتھ مل کر کام کررہا ہے۔

این سی اے کا کہنا ہے کہ یہ رقم منشیات کے کاروبار سے حاصل ہونے والی رقم ہے جولندن میں گنتی سے قبل برطانیہ بھر کے جرائم پیشہ گروہوں سے جمع کی گئی تھی۔ کوریئرز کو ہر سفر کے لیے قریباً 3،000 پاؤنڈ ادا کیے جاتے تھے۔

این سی اے کے سینیرتفتیشی افسر ایان ٹروبی نے ایک بیان میں کہا:’’یہ کوریئرزمنی لانڈرنگ کے ایک بڑے نیٹ ورک میں اہم کردارادا کررہے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ ’’جس جرائم پیشہ گروپ سے ان کا تعلق تھا،وہ برطانیہ سے بڑی تعداد میں مجرمانہ نقدی اسمگل کرنے کا ذمے دار تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں