سوڈان میں ہسپتال پہنچنا دشوار، گاڑی میں بچے کی پیدائش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

تقریباً 3 ہفتے قبل سوڈان میں فوج اور ریپڈ سپورٹ فورسز کے درمیان جھڑپوں کے آغاز کے بعد سے یہاں کا منظر انسانیت سوز اور المناک کہانیوں سے خالی نہیں رہا۔

انہی کہانیوں میں ایک اس بچے کی بھی ہے جس نے آج گولیوں اور میزائلوں کے شور میں ایک سڑک پر چلتی گاڑی میں آنکھ کھولی ہے۔ خرطوم کی طویل سڑک پر اس بچے کے والد خرطوم نارتھ ہسپتال پہنچنے کی کوشش کر رہے تھے مگر شہر کے حالات کے سبب انہیں ہسپتال پہنچنے میں تاخیر ہوئی اور نومولود نے گاڑی میں ہی جنم لیا۔

طبی امداد فراہم رضاکاروں نے ماں کی پیدائش میں مدد کی۔ نوزائیدہ بچے کا نام "منتصر" رکھا گیا ہے۔

امید کی کرن

معاون رضاکار ڈاکٹروں میں سے ایک ڈاکٹر نے العربیہ سے بات کرتے ہوئے خوشی کا اظہا کیا اور کہا کہ "ایسے وقت میں جب ہر طرف جنگ کا خوف ہے اور علاج کے لیے ہسپتال بند ہیں ایک انسان کا دنیا میں آنا اور اس کے رونے کی آواز سننا ایک خوبصورت اور امید افزا عمل تھا۔"

یہ ان بے شمار کہانیوں میں سے ایک ہے جو 15 اپریل کو سوڈان میں تنازعہ شروع ہونے کے بعد سے منظر عام پر آئی ہیں۔

سوڈانی وزارت صحت کے ایک بیان کے مطابق لڑائیوں میں اب تک کم از کم 512 افراد ہلاک اور ہزاروں زخمی ہو چکے ہیں، تاہم جاری لڑائی کے نتیجے میں متاثرین کی تعداد اس سے کہیں زیادہ بڑھ سکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں