سریع الحرکت فورسز کی جنگی صلاحیتوں میں 50 فی صد کمی کردی:سوڈانی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سوڈانی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ اپنےمدمقابل نیم فوجی سریع الحرکت فورسز (آر ایس ایف) کی جنگی صلاحیتوں کو 45سے55 فی صد تک کم کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے۔

فوج نے منگل کو ایک بیان میں کہا ہے کہ آر ایس ایف نے 15 اپریل تک دارالحکومت خرطوم میں مسلح سازوسامان سے لیس بڑی تعداد میں اپنی فورسز کو متحرک کیا تھا۔ فوج کا تخمینہ ہے کہ آر ایس ایف کے دستوں میں 27،135 جنگجو، 39،490 ریکروٹ، 1،950 فوجی گاڑیاں، 104 بکتربند گاڑیاں اور مشین گنوں سے لیس 171 گاڑیاں شامل ہیں۔

جنرل عبدالفتاح البرہان کے زیرکمان آرمی کا کہنا ہے کہ گذشتہ 16 دنوں کی لڑائی کے دوران میں اس نے آر ایس ایف کی جنگی صلاحیتوں کو قریباً نصف کرنے میں کامیابی حاصل کی ہے۔

واضح رہے کہ 15 اپریل کو سوڈان کی فوج کے سربراہ جنرل عبدالفتاح البرہان اور جنرل محمد حمدان دقلو المعروف حمیدتی کی سربراہی میں نیم فوجی سریع الحرکت فورسزکے درمیان جھڑپیں شروع ہوئی تھیں۔

ان دو متحارب فوجی دھڑوں کے درمیان لڑائی شروع ہونے کے بعد سے اب تک سوڈان میں سیکڑوں افراد ہلاک، ہزاروں زخمی اورہزاروں ہی کی تعداد افراد ملک چھوڑ کر جا چکے ہیں۔

اقوام متحدہ نے پیر کے روز بتایا تھا کہ اس مسلح تنازع میں 528 افراد ہلاک اور 4599 سے زخمی ہوئے ہیں۔

اقوام متحدہ نے یہ بھی بتایاکہ اب تک 73,000 افراد سوڈان چھوڑکربیرون ملک جاچکے ہیں۔اس نے خبردار کیا ہے کہ جاری مسلح بحران کی وجہ سے قریباً 815،000 افراددربدر ہوسکتے ہیں اوران میں ایک کثیرتعداد ہمسایہ ممالک میں پناہ لینے پرمجبور ہوگی جس سے اس غریب افریقی ملک میں سنگین انسانی حالات پیدا ہوسکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں