روس اور یوکرین

روس نے یوکرین کے داغے گئے امریکی ساختہ جے ڈیم اسمارٹ بم کوناکارہ بنادیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

روس کی وزارتِ دفاع کےترجمان ایگورکوناشینکوف نے بدھ کے روزکہا ہےکہ روس کے فضائی دفاع نے پہلی باریوکرین کی جانب سے داغے گئےامریکی ساختہ جے ڈیم بم کو ناکارہ بنا دیا ہے۔

روس کے سرکاری خبررساں ادارے’تاس‘کی رپورٹ کے مطابق انھوں نے کہا کہ گذشتہ 24 گھنٹےکے دوران میں فضائی دفاعی صلاحیتوں نے ہیمارس کے چارراکٹوں اور ایک امریکی ساختہ جے ڈیم اسمارٹ ایئربم کو ناکارہ بنایا ہے۔

مشرقی یوکرین کے علاقے دونیتسک کےمقبوضہ علاقوں میں روس کی قائم مقام انتظامیہ کے مشیر یان گیگن نے کہاکہ یوکرین کی فوج نے بخموت شہرکے جنوبی راستے پر واقع کردیومیوکا کے علاقے میں امریکی ساختہ جے ڈی اے ایم گائیڈڈ بم استعمال کیا تھا۔اس علاقے کو روسی افواج نے ایک بڑے حملے میں نشانہ بنایا تھا۔

امریکی محکمہ دفاع کے مطابق جوائنٹ ڈائریکٹ اٹیک ایمونیشنز یا جے ڈی اے ایم ایک کم قیمت، گائیڈڈ فضا سے زمین تک مار کرنے والا ہتھیار ہے، جو عالمی پوزیشننگ سسٹم کی مدد سے چلنے والے انرشیل نیویگیشن سسٹم کا استعمال کرتا ہے اور یہ اپنے 2،000 یا 1،000 پاؤنڈ وزنی وار ہیڈ کوٹھیک طور پر ہدف تک لے جاسکتا ہے۔

امریکی فضائیہ کے مطابق بنیادی طور پر جے ڈی اے ایم ایک گائیڈنس ٹیل کٹ ہے جو موجودہ غیر گائیڈڈ فری فال بموں کو درست، خراب موسمی 'اسمارٹ' گولہ بارود میں تبدیل کرتی ہے۔یہ توسیعی رینج کٹس (جے ڈی اے ایم-ای آر) ہدف کو24 کلومیٹر سے بڑھا کر تقریبا 72 کلومیٹر کردیتی ہیں۔

امریکی فضائیہ کے یورپ اورافریقا میں کمانڈر جیمز ہیکرنے مارچ میں تصدیق کی تھی کہ امریکانے دسمبرکے آخرمیں اعلان کردہ قریباً 2 ارب ڈالر کے فوجی امدادی پیکج کے حصے کے طور پر یوکرین کو جے ڈی اے ایم-ای آر پریسیشن گائیڈڈ بم مہیا کیے تھے۔

دوسری جانب ماسکو نے باربار خبردارکیا تھا کہ اگر امریکانے یوکرین کو طویل فاصلے تک مار کرنے والے فضائی ہتھیاروں کی صلاحیت مہیا کی تو تنازع میں شدت آئے گی۔ روسی صدرولادی میرپوتین نے گذشتہ سال جون میں دھمکی دی تھی کہ اگر واشنگٹن کیف کو اس طرح کے فضائی ہتھیاروں اور گولہ بارود سے لیس کرتا ہے تو ماسکو ان اہداف کو نشانہ بنائے گا جن کو ہم ابھی تک ہدف نہیں بناسکے ہیں۔

تاہم، فروری 2022 میں روس کے حملے کے آغاز کے بعد سے، امریکانے اربوں ڈالرکے فوجی سازو سامان اوررسد کے ذریعے روسیوں کے حملے کے خلاف یوکرین کی لڑاکا صلاحیتوں میں اضافہ جاری رکھاہے۔اس میں طویل فاصلے تک مارکرنے والے راکٹ، توپ خانے کے ساتھ ساتھ ہتھیاروں کے نظام اور بکتربندگاڑیوں کی ایک وسیع رینج شامل ہے۔امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے گزشتہ ماہ کہا تھا کہ اس فوجی امداد نے یوکرین میں ’’میدان جنگ میں ایک واضح اور براہ راست فرق پیدا کیا ہے‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں