سوڈان میں جنگ بندی میں توسیع کے لیے سعودی عرب کے ساتھ مل کر کام کر رہے ہیں: بلنکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر خارجہ انٹنی بلنکن نےکل منگل کو کہا ہے کہ واشنگٹن جدہ شہر کی میزبانی میں ہونے والی بات چیت کے دوران جنگ بندی میں توسیع اور سوڈان میں انسانی امداد فراہم کرنے کے معاہدے تک پہنچنے کے لیے سعودی عرب کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکا سوڈان کو سول ڈیموکریٹک حکمرانی کے راستے پر واپس لانے کے مقصد کو ترک نہیں کرے گا۔

سوڈانی فوج اور حریف سریع الحرکت فورسز کے درمیان ہفتہ کو جدہ مذاکرات شروع ہوئے۔

اقوام متحدہ کے ایک ترجمان نے کل منگل کو کہا کہ اقوام متحدہ کے امدادی سربراہ مارٹن گریفتھس نے تجویز کیا ہے کہ سوڈان میں متحارب فریق انسانی امدادی سامان کی محفوظ گذر گاہ کو یقینی بنانے کے اعلان کی حمایت کریں۔

بین الاقوامی تنظیم کے نائب ترجمان فرحان حق نے مزید کہا کہ "حقیقت یہ ہے کہ یہ اعلان جدہ مذاکرات میں مشاورت سے مشروط تھا۔"

انہوں نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ "انہیں امید ہے کہ اس اعلان کی جلد از جلد توثیق کر دی جائے گی تاکہ سوڈان میں لاکھوں لوگوں کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے امدادی کارروائیوں کو تیزی سے اور محفوظ طریقے سے بڑھایا جا سکے۔"

سوڈان میں اقوام متحدہ کے انٹیگریٹڈ ٹرانزیشنل سپورٹ مشن نے منگل کو کہا کہ مشن کے سربراہ وولکر پیریٹز سوڈان میں تنازع کے دونوں فریقوں سے رابطے میں ہیں۔ وہ جنگ بندی کریں تاکہ انتہائی ضروری انسانی امداد کی فراہمی کی اجازت دی جا سکے۔

مشن نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ کے ذریعے مزید کہا کہ پیریٹز نے اقوام متحدہ کی عمارتوں کی "لوٹ مار" کی مذمت کی اور انسانی ہمدردی کے کارکنوں اور سہولیات کے تحفظ کی ضرورت پر زور دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں