دبئی کی الامارات ایئرلائنز کا سالانہ منافع 3 ارب ڈالرریکارڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دبئی کی الامارات (ایمریطس) ایئرلائن نے جمعرات کو مالی سال 2022-23 میں اپنے 10.9 ارب درہم (3 ارب ڈالر) کے سالانہ منافع اور گروپ آمدن میں 81 فی صد اضافہ کی اطلاع دی ہے۔اس کا کہنا ہے کہ یہ اس کا اب تک کا سب سے زیادہ منافع بخش مالی سال رہا ہے۔

دبئی کی سرکاری فضائی کمپنی کو مالی سال 22-2021 میں 1.1 ارب ڈالر کا خسارہ ہوا تھا جبکہ اس سے ایک سال قبل اسے 5.5 ارب ڈالرسالانہ کا نقصان ہوا تھا۔

فضائی کمپنی کے چیئرمین اورچیف ایگزیکٹو آفیسر شیخ احمد بن سعید آل مکتوم نے کہا کہ کرونا کی وبا کے دوران میں طلب میں کمی ہوئی تھی لیکن اس کے بعد ایئرلائن کی’’مکمل طور پربحالی‘‘ ہوگئی ہے۔

انھوں نے کہا:’’کرونا کے تعلق سے آخری سفری پابندیاں ختم ہونے کے بعد مانگ میں زبردست اضافہ ہوا تھا،اس کے پیش نظرہم اپنے آپریشنز کو تیزی سے بڑھانے کے لیے تیار تھے‘‘۔

الامارات کا کہنا ہے کہ اس کی مسافرپروازوں کی 79.5 فی صد نشستیں بھری گئی ہیں۔یہ شرح ایک سال قبل 58.6 فی صد تھی اور اب وہ گذشتہ سال کے 140 سے زیادہ مقامات کے مقابلے میں 150 مقامات کے لیے پروازیں چلا رہی ہیں۔

فضائی کمپنی نے یہ بھی کہا کہ اس نے تجارتی ہوا بازی میں فوسل ایندھن کے اثرات کو کم کرنے پر توجہ مرکوز کرنے والے تحقیقی فنڈ کے لیے 20 کروڑ ڈالر کا وعدہ کیا ہے،کیونکہ فی الحال دستیاب اختیارات کے ساتھ خالص صفراخراج کے اہداف کو حاصل کرنا ممکن نہیں ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں