مصر کے ساتھ سنجیدہ تعلقات کےلیے پُرامید ہیں: ایرانی وزیر خارجہ

ایرانی اور مصری صدور کی جلد ملاقات کی تیاریوں کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایرانی وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے آج اتوار کو کہا ہے کہ ان کا ملک ایران اور مصر کے درمیان سنجیدہ تعلقات کے لیے پرامید ہے۔

امیرعبداللہیان نے کہا کہ دونوں ملکوں کے مفادات کے تحفظ کے دفاتر تہران اور قاہرہ میں فعال ہیں اور ان دونوں دفاتر کے سربراہ میں دونوں طرف سے سفیر کی سطح پر ایک شخص ہوتا ہے۔ اس لیے وہاں براہ راست سرکاری چینل اور رابطے موجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ صدر ابراہیم رئیسی خطے کے ممالک اور مصر کے ساتھ تعلقات کو بہتربنانے میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں۔

دوسری طرف ایرانی پارلیمنٹ کے رُکن نے دونوں ممالک کے سفارتخانوں کے دوبارہ کھلنے کے بعد ایرانی صدر ابراہیم رئیسی اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے درمیان ملاقات کے انتظامات کا اعلان کیا۔

ایران کی نیم سرکاری خبر رساں ایجنسی ‘تسنیم’ نے ایرانی پارلیمنٹ کی قومی سلامتی کمیٹی کے رکن فداحسین مالکی کے حوالے سے خبر دی ہے کہ "مستقبل قریب میں ہم ایران اور مصر کے سفارتخانوں کے کھلنے کا مشاہدہ کریں گے اور اس کے بعد اس طریقہ کار کے تحت صدر ابراہیم رئیسی اور مصری صدر سیسی کے درمیان ملاقات کا اہتمام کیا جائے گا۔

مصر نے سعودی عرب ایران تعلقات کی بحالی کے فیصلے کو سراہا تھا اور امید ظاہر کی تھی کہ اس سے تہران کی پالیسیوں پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔

ایک سرکاری بیان میں مصری ایوان صدر نے کہا کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان سفارتی تعلقات کی بحالی کا فیصلہ اہم پیش رفت ہے اور اس سلسلے میں اٹھائے گئے اقدامات کا خیر مقدم کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں