تونس میں لرزہ خیز واردات ، شوہر نے بیوی اور بیٹی پر پٹرول چھڑک کر زندہ جلا دیا

60 سالہ متاثرہ خاتون جھلس کر جاں بحق ہو گئی، بیٹی تاحال ہسپتال میں زیر علاج ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

تونس میں ایک بھیانک واردات نے لوگوں کو ہلا کر رکھ دیا ۔ اتوار کے روز، قیروان گورنری کے ایک قصبے میں ایک شخص نے اپنی بیوی اور بیٹی کو اس وقت زندہ جلا دیا جب وہ سو رہی تھیں۔
شوہر نے مبینہ طور پر کمرے میں پٹرول چھڑک کر اسے آگ لگا دی۔

جاری تحقیقات کے مطابق مقتولہ بیوی ، جس کی عمر 60 سال ہے ، طبی امداد کے باوجود جانبر نہ ہوسکی، جب کہ بیٹی تاحال اسپتال میں زیر علاج ہے۔

قاتل نے اعتراف جرم کرلیا اور اسے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

یہ واقعہ سوس گورنری میں اسی طرح کے ایک انسانیت سوز جرم کے ایک ہفتہ بعد سامنے آیا ہے، جس میں ایک 30 سالہ حاملہ خاتون کو اس کے شوہر نے گھریلو جھگڑے کی وجہ سے سانس بند کر کے قتل کر دیا تھا۔

تونس میں شوہروں کے ہاتھوں بیویوں کو قتل کرنے کے واقعات میں ہر ماہ تقریباً ایک سے زیادہ کیسز کی شرح سے اضافہ ہوا ہے۔ اس رجحان نے شہریوں میں تشویش کو جنم دیا ہے اور عورتوں پر بڑھتے ہوئے تشدد کی وارداتوں کو روکنے کا مطالبہ زور پکڑ رہا ہے۔

سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ وہ اس سلسلے میں نئے کام اور مداخلت کے طریقہ کار کی تشکیل کے عمل میں ہیں، جس میں خواتین اور بچوں کے خلاف تشدد کی روک تھام کے سلسلے میں سائنسی بنیادوں پر قومی صلاحیتوں کو مضبوط بنانے کے لیے دیگر اسٹیک ہولڈرز اور شراکت داروں کے ساتھ مشاورت اور ہم آہنگی مکمل کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں