دو سعودی خلا باز 21 مئی کو سائنسی سفر پر روانہ ہوں گے

ریانہ ہرناوی اور علی القرنی انٹرنیشنل سپیس سٹیشن کے پہلے سعودی خلا باز ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

دو سعودی خلا باز کے 21 مئی کو سائنسی سفر پر روانہ ہونے کا اعلان کردیا گیا۔ پہلی سعودی اور عرب مسلم خاتون خلا باز ریانہ برناوی اور علی القرنی بین الاقوامی خلائی اسٹیشن (آئی ایس ایس) کے پہلے سعودی خلاباز بھی ہیں۔ 21 مئی کو ان دونوں کی سائنسی سفر پر روانگی سعودی عرب کے لیے ایک تاریخی واقعہ شمار ہوگی۔ یہ خلائی میدان میں مملکت کے لیے ایک مرحلے کا آغاز ثابت ہوگا۔

سعودی سپیس اتھارٹی نے کہا ہے کہ یہ سفر سعودی خلاباز پروگرام کے فریم ورک کے اندر آتا ہے جو 22 ستمبر 2022 کو شروع کیا گیا تھا۔ اس پروگرام میں مائیکرو گریوٹی ماحول میں 14 اہم سائنسی تحقیقی تجربات شامل ہیں۔ یہ تجربات ایسے جوابات فراہم کرنے میں معاون ثابت ہوں گے جو انسانوں کو مزید بااختیار بنائیں گے۔

تحقیق کے نتائج خلائی تحقیق اور انسانیت کی خدمت کے میدان میں سعودی عرب کی عالمی پوزیشن کو بھی بہتر بنائیں گے۔ یہ اقدام سعودی تحقیقی مراکز کے صحت، پائیداری اور خلائی ٹیکنالوجی جیسے متعدد ترجیحی شعبوں میں اثر انداز ہونے کی بھی تصدیق کرتا ہے۔ یہ خلائی پروگرام سعودی ’’ویژن 2030‘‘ کے اہداف کو حاصل کرنے کی جانب ایک سفر ہے۔

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان اور ولی عہدہ شہزادہ محمد بن سلمان نے سعودی خلا بازوں ریانہ برناوی اور علی القرنی کی خلا میں روانگی کے موقع پر ان سے ملاقات کی اور سائنسی سفر میں ان کی کامیابی کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں