پینٹاگون کے اعلیٰ پالیسی سربراہ اس موسم گرما میں مستعفی ہو جائیں گے

کولن کہل 2022 میں روسی حملے کے بعد یوکرین پر امریکی پالیسی کا ایک اہم حصہ رہے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے بدھ کو اعلان کیا کہ پینٹاگون میں اعلیٰ پالیسی سربراہ اس موسم گرما میں اپنے عہدے سے مستعفی ہو جائیں گے۔

کولن کہل، جو دفاع کے لیے پالیسی کے انڈر سیکریٹری ہیں، نے اعلان کیا ہے کہ وہ جولائی کے وسط میں مستعفی ہو جائیں گے۔

اب جبکہ امریکی صدر اگلی مدت کے لیے اپنے دوبارہ انتخاب کے لئے تیاری کر رہے ہیں ، بائیڈن انتظامیہ کے متعدد عہدیداروں نے حالیہ ہفتوں میں استعفیٰ دے دیا ہے یا اعلان کیا ہے کہ وہ مستعفی ہونے والے ہیں۔

کولن کہل 2022 میں روسی حملے کے بعد یوکرین پر امریکی پالیسی کا ایک اہم حصہ تھے۔

آسٹن نے بدھ کو ایک بیان میں" چین کے چیلنج سے نمٹنے، روسی جارحیت کے شدید خطرے اور دیگر خطرات پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے قومی دفاعی حکمت عملی پر کولن کہل کی کوششوں کی تعریف کی۔

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا کہ اگر دوسری مدت کے لیے منتخب ہوئے تو کہل بائیڈن انتظامیہ میں واپس آسکتے ہیں۔ وہ اس سے قبل اوباما انتظامیہ میں خدمات انجام دے چکے ہیں۔

کولن کہل کے اس اعلان پر ری پبلکن فانون سازوں نے خوشی کا اظہار کیا۔

انہیں دو سال قبل ریپبلکن قانون سازوں نے ماضی کی سوشل میڈیا پوسٹس پر تصدیقی سماعتوں کے دوران تنقید کا نشانہ بنایا تھا جہاں انہوں نے ریپبلکن پارٹی کو "نسل کش جماعت" کہا تھا۔

سماعت کے دوران، کہل نے معافی مانگی اور بمشکل صفر ریپبلکن ووٹوں سے ان کی تصدیق ہوئی۔

کہل سعودی عرب کو امریکی ہتھیاروں کی فروخت کے ناقد بھی تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں