امریکہ نے اسرائیل میں نسل پرستانہ ‘‘عرب مردہ باد’’ کے نعروں کی مذمت کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکہ نے اپنے اہم اتحادی اسرائیل میں جمعرات کے روز اسرائیلی قوم پرستوں کے ایک بڑے مارچ کے دوران عربوں کے خلاف نسل پرستانہ نعروں کی مذمت کی ہے۔ یہودی قوم پرستوں نے مارچ کے دوران ‘‘ عرب مردہ باد’’ کے نعرے لگائے تھے۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان میتھیو ملر نے ٹویٹر پر لکھا کہ ہم یروشلم میں مارچ کے دوران ‘‘عربوں کے لیے مردہ باد’’ جیسے نفرت انگیز نعروں کی مذمت کرتے ہیں۔ امریکہ واضح طور پر کسی بھی شکل کی نسل پرستانہ زبان کی مخالفت کرتا ہے۔

اسرائیل نے جمعرات کے روز مشرقی القدس کی اولڈ سٹی میں مرکزی فلسطینی سڑک پر یہودی قوم پرستوں کے پرچم لہراتے ہوئے مارچ کیا تھا۔ اس فلیگ مارچ کے تحفظ کے لیے 2 ہزار سے زیادہ پولیس اہلکار تعینات کیے گئے تھے۔ فلیگ مارچ 1967 میں متنازع طور پر مشرقی القدس اور مغربی القدس کو ملانے کی یاد میں نکالا جاتا ہے۔

گزشتہ ایک برس کے دوران اسرائیلی- فلسطینی تشدد میں اضافے اور غزہ میں اسرائیل اور فلسطینی عسکریت پسندوں کے درمیان شدید لڑائی کے باوجود پولیس نے ہزاروں مارچ کرنے والوں کو القدس کی اولڈ سٹی کے دمشق گیٹ سے روایتی راستہ اختیار کرنے کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا تھا۔

جمعرات کی صبح سیکڑوں یہودی اس دن کی سرگرمیوں کے ایک حصے کے طور پر القدس کے ایک حساس مقام پر پہنچے۔ یہودیوں کی اس آمد نے فلسطینیوں میں غم و غصہ کی پھیلا دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں