امریکی صدر کے مشیرکی رہائش گاہ میں نامعلوم شخص کے گھسنے کے واقعے کی تحقیقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی سیکرٹ سروس اس بات کی تحقیقات کر رہی ہے کہ کس طرح ایک شخص تقریباً دو ہفتے قبل آدھی رات کو صدر بائیڈن کے قومی سلامتی کے مشیر چیک سلیوان کے گھر میں داخل ہوا اور اس نے وہاں پر توڑ پھوڑ کی۔

تین امریکی حکام نے بتایا کہ سکیورٹی گارڈز اور سیکرٹ سروس سے چھپ کر ایک شخص چیک سلیوان کے گھرمیں داخل ہوا۔

اس واقعے سے واقف دو افراد نے بتایا کہ نامعلوم شخص اپریل کے آخر میں رات 3 بجے کے قریب چیک سلیوان کے گھر میں داخل ہوا اور سلیوان نے اس شخص کا سامنا کیا اور اسے وہاں سے جانے کا حکم دیا۔

سلیوان کے پاس 24/7 خفیہ سکیورٹی سروس ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ گھر کے باہر تعینات گارڈز کو اس بات کا علم نہیں تھا کہ یہ شخص واشنگٹن کے ویسٹ اینڈ میں واقع گھر میں داخل ہوا ہے یہاں تک کہ وہ شخص وہاں سے چلا گیا اور سلیوان ایجنٹوں کو آگاہ کرنے کے لیے باہر آیا۔

واقعے سے واقف لوگوں کے مطابق اندر گھسنے والا نشے میں تھا اور اپنے ٹھکانے کے بارے میں الجھن میں تھا۔ان کا کہنا تھا کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ وہ شخص سلیوان کو جانتا تھا یا اسے نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہا تھا۔

سیکرٹ سروس نے ایک بیان میں کہا کہ اس نے اس واقعے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں اور یہ کہ گھر میں گھسنے والا سلیوان کے گھر میں کیسے داخل ہوا، اس کا پتہ نہیں چل سکا۔

سیکرٹ سروس کے ترجمان انٹنی گولیلمی نے واشنگٹن پوسٹ کے ایک سوال کے جواب میں بیان میں کہا کہ "اگرچہ ہدف کو کوئی نقصان نہیں پہنچا پھر بھی ہم اس معاملے کو بہت سنجیدگی سے لے رہے ہیں اور جو کچھ ہوا اس کے تمام پہلوؤں کا جائزہ لینے کے لیے ہم نے مکمل تحقیقات شروع کر دی ہیں۔"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں