متنوع نشریات کی کوشش میں ‘‘سی این این’’ زیادہ ریپلکنز کی میزبانی کر رہا: سی ای او

نیٹ ورک کو 10 مئی کو 70 منٹ کی نشریات کے باعث شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا، ٹرمپ نے الیکشن 2020 کے متعلق متنازع باتیں کی تھیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سی این این کی پیرنٹ کمپنی "وارنر بروس ڈسکوری" کے سی ای ایو ڈیوڈ زسلاو نے جمعرات کو کہا کہ چینل اپنی سکرین پر مزید ریپبلکنز کی میزبانی کرنے کے لیے کام کر رہا ہے کیونکہ وہ سیاسی تنوع حاصل کرنا چاہتا ہے۔

زسلاف نے ٹیکنالوجی، میڈیا اور کمیونیکیشنز کانفرنس میں میں گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ "ہمارا خیال یہ ہے کہ دونوں طرف وکالت کے نیٹ ورکس موجود ہیں۔ ہمارے پاس دنیا کے بہترین صحافی ہیں۔ ہمیں ہر مسئلے کے دونوں رخ دکھانے کی ضرورت ہے"

سی این این 10 مئی کو سابق ریپبلکن صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ایک متنازعہ نشریات کی زد میں آیا تھا۔ یہ نشریات 70 منٹ تک جاری رہی تھیں۔ اس کے دوران ٹرمپ نے 2020 کے الیکشن ہارنے کے حوالے سے متنازع باتیں کی تھیں۔

ٹرمپ نے کہا تھا کہ اگر وہ منتخب ہوئے تو وہ 6 جنوری 2021 کو کیپٹل ہل کی عمارت پر حملہ میں حصہ لینے کے مرتکب متعدد حامیوں کو معاف کر دیں گے۔ انہوں نے سی این این کے اینکر کیٹلان کولنز کو "قابل نفرت" قرار دیا تھا۔

جس نشریات میں ٹرمپ نے یہ بات کی اس نے 3.3 ملین ناظرین کو اپنی طرف متوجہ کیا تھا۔ یہ پروگرام اس شام کا سب سے زیادہ دیکھا جانے والا پروگرام بن گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں