موٹے مسافر کا وزن کرنے پرفضائی کمپنی کو تنقید کا سامنا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

موٹاپے کا شکارمسافروں کے فضائی سفرمیں اُنہیں عموما مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ کبھی موٹے مسافروں کو دو نشستوں کا کرایہ ادا کرنا پڑتا ہے اور کبھی زیادہ موٹے مسافروں کو جہازوں پر سفر کے لیے اضافی رقم خرچ کرنا پڑتی ہے۔

اس حوالے سے ایک نئی اور حیران کن خبر سامنے آئی ہے۔ امریکا کی ایک فضائی کمپنی نے موٹاپے کا شکار خاتون مسافر کو سامان کا وزن کرنے کے پیمانے پر سوار ہونے کو کہا تاکہ اس کا وزن چیک کیا جا سکے۔

ایسا اس لیے کیا گیا تاکہ مسافر کے سفر کرنے کی اجازت دینے یا نہ دینے کا فیصلہ کیا جا سکے تاہم کمپنی کے اس اقدام نے مسافروں میں غم وغصے کی لہر دوڑا دی۔

سوشل میڈیا پراس حوالے سے سامنے آنے والی ویڈیو پر صارفین اور عام شہریوں کی طرف سے شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔ صارفین کا کہنا ہے کہ کمپنی کو مسافروں کا وزن چیک کرنے کے ایسا طریقہ کار اختیار نہیں کرنا چاہیے جس سے مسافروں کی توہین کا پہلو نکلتا ہو۔

برطانوی اخبار "دی انڈیپینڈنٹ" کی طرف سے نشر کی گئی ویڈیو ‘العربیہ ڈاٹ نیٹ’ کی طرف سے دیکھی جانے والی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ لیلیان نامی ایک خاتون مسافر نے اس واقعے کی ویڈیو بنائی جس پر موٹاپے کا شکار مسافر اور دوسرے مسافروں نے اس واقعے پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔

مسافروں کو بتایا گیا کہ "ایئر لائن نے اس وقت کہا تھا کہ اسے مسافروں کا وزن معلوم کرنا ہوگا، کیونکہ طیارہ چھوٹا تھا اور یہ اقدام حفاظتی وجوہات کی بنا پر کیا گیا تھا۔"

اس ویڈیو پر صارفین کی طرف سے سخت رد عمل سامنے آیا ہے۔ اسے اب تک ’ٹک ٹاک’ پر1.6 ملین سے زائد افراد نے “ٹک ٹاک” پر دیکھا جا چکا ہے۔ صارفین نے اسے فضائی کمپنی کی طرف سے مسافروں کی توہین قرار دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں