سکون کی تلاش میں چینی نے پرتعیش زندگی چھوڑ کر ویرانے میں خیمہ لگا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ہرانسان آرام اور سکون کی تلاش میں رہتا ہے اور سکون کے حصول کے لیے وہ دولت سمیت ہر سہولت کا سہارا لیتا ہے، مگرایک چینی شہری نے پرسکون زندگی کی تلاش کے لیے لگژری زندگی اور مادی عیش وآرام ترک کرکے ویرانے میں ایک خیمہ لگا کر سکون حاصل کرنے کا خواب دیکھنا شروع کیا ہے۔ وہ اسی ویران مقام پر لگائے خیمے میں رہتا ہے اور شہریوں سے میل جول سےبھی گریز کرتا ہے۔

چین کے جنوب مغربی علاقے سے تعلق رکھنے والے 29 سالہ شخص نے اپنی ملازمت چھوڑ کر ایک متروک پارکنگ میں خیمہ لگایا اور اب وہی خیمہ اس کی رہائش گاہ ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ میں آرام کرنا چاہتا تھا کام نہیں کرنا چاہتا تھا۔ یہ شخص چین کے صوبہ سیچوان کے ایک پرانے پارکنگ میں 200 دن سے زیادہ عرصے سے اپنے نارنجی خیمے میں رہتا ہے۔ اس نے خیمے کے باہر ایک نوٹ لکھ رکھا ہے جس میں اس نے راہ گیروں کو متنبہ کیا ہے کہ وہ اس کے سامان کو نہ چھیڑیں اور خیمے میں اس کی راز داری کا احترام کریں۔

ٹائمز ناؤ نیوز کے مطابق اس کے خیمے کی قیمت 400 یوآن یعنی 58امریکی ڈالر کے برابر ہے۔ اس کے پاس پہننے کے کچھ پرانے کپڑے، ایک چولہا، ایک ایلومینیم کا برتن اور کچھ کھانے پینے کی چیزیں ہیں۔

اسے ہر روز کھانا پکانے کے لیے سخت محنت کرنا پڑتی ہے، پانی تلاش کرنے کے لیے لمبا فاصلہ طے کرنا پڑتا ہے اور اپنے آلات کی بیٹریاں چارج کرنا پڑتی ہیں۔ اس نے 2018 کے آخر میں نوکری چھوڑ دی تھی اور بے روزگار رہنے کا فیصلہ کیا تھا۔

شونامی اس چینی کے دوستوں نے اسے کاروبار شروع کرنے کے لیے رہائش اور مالی مدد فراہم کرنے کی پیشکش کی، لیکن اس نے یہ کہتے ہوئے ان کی مدد لینے سے انکار کر دیا کہ "جب آپ زندگی میں فضول کاموں کو ترک کر دیں گے تو آپ آہستہ آہستہ سکون محسوس کریں گے۔ آپ بدلتے ہوئے حالات کے عادی ہو جائیں گے، یہ آسان ہے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں