جنگ بندی معاہدے میں سیاسی مسائل شامل نہیں ہیں: سوڈانی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سوڈان میں سات روزہ جنگ بندی کی الٹی گنتی شروع ہونے والی ہے۔ اس حوالے سے سوڈانی فوج نے بتایا ہہے کہ ریپڈ سپورٹ فورسز کے ساتھ معاہدہ تکنیکی اور فوجی پہلوؤں تک محدود ہے اور اس میں سیاسی مسائل شامل نہیں ہیں۔ اتوار کو ایک بیان میں سوڈانی فوج کے ترجمان نے کہا کہ سوڈانی مسلح افواج نے کل شام جدہ میں مختصر مدت کے لیے جنگ بندی اور انسانی ہمدردی کے انتظامات کے معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

بیان کے مطابق مختصر مدت کی جنگ بندی کی مدت سات دن ہے، اور یہ پیر کی شام ٹھیک نو بج کر پینتالیس منٹ پر نافذ ہو جائے گی۔

یہ معاہدہ عارضی جنگ بندی کے انتظامات اور عام شہریوں کی نقل و حرکت کی آزادی کے طریقہ کار کے فوجی اور تکنیکی پہلوؤں تک محدود ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس جنگ بندی کا مقصد لوگوں کو آر ایس ایف کے تشدد اور خلاف ورزیوں سے بچانا ہے۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ جنگ بندی کا مقصد کسی سیاسی صورتحال پر بات کیے بغیر ہسپتالوں کو خالی کرانا اور خدمات کی سہولیات اور متعلقہ امور کو برقرار رکھنا ہے۔

واضح ہے سوڈان میں 15 اپریل سے سوڈانی فوج اور آر ایس ایف کے درمیان لڑائی شروع ہوگئی تھی۔ تنازعہ شروع ہونے کے بعد سے دونوں فریق ایک سے زیادہ مرتبہ جنگ بندی پر متفق ہو چکے ہیں لیکن وہ بارہا ایک دوسرے پر اس کی خلاف ورزی کا الزام لگاتے آ رہے ہیں۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے مطابق فوج اور ریپڈ سپورٹ فورسز کے درمیان فوجی تصادم کے نتیجے میں 700 سے زائد افراد ہلاک اور تقریباً چھ ہزار زخمی ہوچکے ہیں۔ لگ بھگ 10 لاکھ افراد بے گھر ہو گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں