کینز فلم فیسٹول میں ریڈ سی فلم فیسٹیول کی 4 فلموں کی جیت کا جشن

ہم نئی آوازوں کی حمایت کے لیے اپنی کوششوں کو دوگنا کرنے کے منتظر ہیں: الترکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ریڈ سی انٹرنیشنل فلم فیسٹیول نے اعلان کیا کہ ریڈ سی فلم فاؤنڈیشن کے ذریعے ریڈ سی فنڈ اور ریڈ سی سوک کے ذریعے سپورٹ کی جانے والی چار فلموں نے 74 ویں کینز انٹرنیشنل فلم فیسٹیول میں غیر یقینی طور پر چار ایوارڈ جیت لیے ہیں۔

کمال الازرق کی ہدایت کاری میں بننے والی فلم "عصابات" نے جیوری پرائز جیتا۔ فلم کی کہانی کاسا بلانکا میں مقامی مافیا کے لیے کام کرنے والے ایک باپ اور اس کے بیٹے پر مشتمل ایک ٹیم کے گرد گھومتی ہے جنہیں اغوا کے بعد ایک طویل رات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

ہدایتکار اسماء المدیر کی دستاویزی فلم "کذب ابیض" نے بہترین ہدایت کاری کا ایوارڈ حاصل کرلیا۔ فلم کی کہانی 1981 میں احتجاجی مظاہروں اور مراکش کے درمیان تعلق کے گرد گھومتی ہے۔

سوڈانی ہدایت کار محمد کردفانی نے اپنی فلم "وداعیا جولیا" کے لیے آزادی ایوارڈ جیت لیا ۔ فلم کی جیت بہت اہمیت کی حامل ہے کیونکہ یہ پہلا موقع ہے جب کانز فلم فیسٹیول میں کسی سوڈانی ہدایت کار نے شرکت کی تھی۔

نئی آواز کے زمرے میں بیلجیئم-کانگو کے ہدایت کار بلوگی نے اپنی فلم "النذیر" کے لیے ایوارڈ جیتا جس میں وہ جمہوریہ کانگو کی روایات اور عقائد کو تلاش کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ یہ ایوارڈ فلم انڈسٹری کی دنیا میں ابھرتی ہوئی صلاحیتوں کو دیا جاتا ہے۔

عرب دنیا میں ان کامیابیوں کا جشن منایا جارہا ہے ۔ اس حوالے سے ریڈ سی انٹرنیشنل فلم فیسٹیول کے سی ای او محمد الترکی نے اس کامیابی پر اپنی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں ان شاندار کامیابیوں پر جیتنے والوں اور ان کی پروڈکشن ٹیموں کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ ہمیں بہت خوشی ہے کہ ان کی صلاحیتوں کو نمایاں کیا گیا اور کینز فلم فیسٹیول جیسے بین الاقوامی اور عالمی میلے میں سراہا گیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ کینز میں یہ کامیابیاں خطے میں بہت بڑی صلاحیت اور ہنر کو ظاہر کرتی ہیں۔ ہم نئی آوازوں کی حمایت کے لیے اپنی کوششوں کو دوگنا کرنے کے منتظر ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں