ایردوآن کی امریکا سے ایف 16 اور واشنگٹن انقرہ سے سویڈن کی شمولیت کی توثیق کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی صدر جو بائیڈن نے پیر کے روز ایک فون کال کے مندرجات کے بارے میں صحافیوں کو دیئے گئے بیانات میں کہا کہ ترک صدر رجب طیب ایردوان نے امریکا کی طرف سے ترکیہ کو F-16 لڑاکا طیاروں کی فروخت کے امکان کا مسئلہ اٹھایا،اس موقعے پرامریکی صدر نے ترکیہ سے سویڈن کے نیٹو میں الحاق کی منظوری کی درخواست کی۔

بائیڈن نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ "ہم اگلے ہفتے اس (سویڈن کے نیٹو الحاق) کے بارے میں مزید بات کریں گے۔"

انقرہ نے نیٹو میں سویڈن کی شمولیت کو قبول کرنے سے انکار کر دیا تھا۔ انقرہ کا سویڈن پرترکیہ کرد عناصر کی پشت پناہی اور انہیں اپنے ملک میں تحفظ دینے کا الزام عاید کرتا ہے۔

ترک ایوان صدر نے پیر کی شام اعلان کیا کہ صدر بائیڈن نے اپنے ترک ہم منصب ایردوآن کو نئی مدت کے لیے دوبارہ منتخب ہونے پر مبارکباد دی۔ تاہم انقرہ میں ایوان صدر کی طرف سے امریکی اور ترک صدور کے درمیان ہونے والی دیگر بات چیت کی تفصیل سامنے نہیں آئی۔

ایوان صدر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ دونوں ممالک کے رہ نماؤں نے دوطرفہ امور اور عالمی چیلنجز پر تبادلہ خیال کیا۔ "ٹاس"نیوز ایجنسی کے مطابق امریکا اور ترکیہ کے درمیان تعلقات کی جامع ترقی پر اتفاق کیا۔

بیان کے مطابق "صدر جو بائیڈن نے صدر ایردوآن کو فون کیا اور انہیں دوبارہ صدر منتخب ہونے پر مبارکباد دی۔

بیان میں اس بات پر زور دیا گیا کہ دونوں صدور نے علاقائی اور عالمی چیلنجوں پر تبادلہ خیال کیا، اور اس بات کا اشارہ کیا کہ ان چیلنجوں کی روشنی میں دونوں ممالک کے تعلقات مزید اہم ہو گئے ہیں۔ انہوں نے تمام شعبوں میں دو طرفہ تعلقات کو فروغ دینے پر اتفاق کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں