ٹیکنالوجی ٹائیکون برائن 45 سال کی عمر میں 18 سال کے کیوں دکھتے ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

پلاسٹک سرجری یا بڑے پیمانے پر گردش کرنے والے بوٹوکس یا فلر انجیکشن کے بغیر زندگی گذارنے اور سدا بہار جوان لگنے کی خواہش پالنے والے برطانوی کاروباری شخصیت ماہر کان برائن اپنی چالیس سال کی عمر میں بھی 18 سال کے دکھائی دیتے ہیں۔

برطانوی اخبار ’’ڈیلی میل‘‘ کی ایک رپورٹ کے مطابق 45 سالہ برائن ابدی جوانی کی تلاش پر ہر سال ڈیڑھ ملین آسٹریلوی پاؤنڈ خرچ کرتے ہیں جسے وہ ایک "منصوبہ بند پروگرام " قرار دیتے ہیں۔

ان کے پاس 30 سے زائد ڈاکٹروں کی ٹیم ہے جو بلڈ پریشر، دل، جگر، گردے، دماغ اور خون کی شریانوں کا باقاعدگی سے معائنہ کرتی ہے۔

وہ روزانہ 80 وٹامنز اور منرلز لیتے ہیں۔ ایک مہینے میں 70 پاؤنڈ میشڈ سبزیاں کھاتے ہیں، ہر رات 8:30 بجے سونے کے عادی ہیں اور اپنی آنتوں کے 33,000 سے زیادہ ایکسرے کروا چکے ہیں۔

صحت مند غذا

برائن کا مقصد حیاتیاتی طور پر 18سال کا لگنا ہے۔ وہ روزانہ 1,977 کیلوریز کھاتے ہیں جس میں بادام کا دودھ، اخروٹ، فلیکس کے بیج اور بیئر شامل ہیں۔

وہ دن میں کم از کم ایک گھنٹہ ورزش بھی کرتے ہیں اور دو سال کے اینٹی ایجنگ کے تجربے کے بعد دعویٰ کرتے ہیں کہ اب ان کا دل 37 سالہ شخص کا، چہرہ 28 سالہ نوجوان اور فٹنس 18 سالہ شخص کی طرح ہے۔

برائن مردانہ ہارمون ٹیسٹو سٹیرون کی ہلکی خوراک بھی لیتے ہیں کیونکہ ان کی محتاط ڈائٹ سے ان ہارمونز کی سطح معمول سے کم رہتی ہے۔ انسانی نشو ونما کے ہارمونز جو تھائمس غدود کو دوبارہ متحرک کرتے ہیں مدافعتی نظام کو صحت مند رکھنے کے ذمہ دار غدود اور موڈ بڑھانے والے لیتھیم کی روزانہ خوراک ان کا معمول ہے۔

پلازما کا تبادلہ

برائن نے گذشتہ ماہ دنیا کے پہلے "ملٹی جنریشنل بلڈ پلازما ایکسچینج" میں اس وقت عالمی توجہ حاصل کی جب ان کے 17 سالہ بیٹے تلمیج نے اپنا جوان خون برائن کو عطیہ کیا جس نے پلازمہ اپنے 70 سالہ والد رچرڈ کو عطیہ کیا۔

ان کے خیال کو چوہوں کے ٹیسٹوں کے ذریعہ حوصلہ افزائی کی گئی تھی جس میں دکھایا گیا تھا کہ چھوٹے چوہوں کے خون سے متاثر ہونے پر بوڑھے چوہوں کو پھر سے جوان کیا جاتا ہے لیکن اس کا سائنسی طور پر انسانوں پر تجربہ نہیں کیا گیا ہے۔

برائن نے اپنی عمر بڑھنے کے خلاف تحقیق کا آغاز اس وقت کیا جب اپنی کمپنی Braintree Venmo کو پے پال کو 800 ملین ڈالر میں فروخت کرنے اور اپنے تین بچوں کی ماں کو طلاق دینے کے بعد اس نے خود کو 60 پاؤنڈ (27 کلوگرام) پر پایا۔

دوسری طرف بہت سے ڈاکٹر جن میں سرخیل برطانوی سائنسدان لارڈ رابرٹ ونسٹن بھی شامل ہیں برائن کے انداز زندگی کو مسترد کرتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اگر کوئی شخص متوازن غذا پر عمل کرتا ہے تو درجنوں وٹامنز لینا بے معنی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں