فرانس:چاقو حملے میں چار بچّے اور ایک بالغ زخمی، بعض کی حالت تشویش ناک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فرانسیسی الپس کے پہاڑی علاقے میں واقع شہر اینیسی میں مبیّنہ طور پر ایک غیرملکی پناہ گزین نے چاقو کے وار کر کے چار بچوں اورایک بالغ کو زخمی کردیا ہے۔فرانس کے ایک سکیورٹی ذریعے نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ دو بچّوں اور بالغ شخص کی حالت تشویش ناک ہے۔

سیکیورٹی ذرائع نے اس سے قبل چھے بچوں سمیت سات افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع دی تھی لیکن بعد میں اس زخمیوں کی تعداد پر نظرثانی کی گئی ہے۔ایک سکیورٹی ذریعے نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر اے ایف پی کو بتایا کہ چاقو سے مسلح شخص نے مقامی وقت کے مطابق جمعرات کو صبح 9 بج کر 45 منٹ پر شہر میں جھیل کے قریب واقع ایک پارک میں کھیلنے والے تین سال کی عمر کے بچّوں کے ایک گروپ پر حملہ کیا۔

فرانسیسی وزیر داخلہ جیرالڈ ڈارمینن نے ایک ٹویٹ میں بتایا کہ سکیورٹی فورسز کے فوری رد عمل کی بدولت ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

إصابة 7 أشخاص بينهم 6 أطفال في هجوم بسكين بمدينة #آنسي الفرنسية.. و #ماكرون يصف الحادثة بـ العمل الجبان #فرنسا #العربية
إصابة 7 أشخاص بينهم 6 أطفال في هجوم بسكين بمدينة #آنسي الفرنسية.. و #ماكرون يصف الحادثة بـ العمل الجبان #فرنسا #العربية

صدر عمانوایل ماکرون نے اس حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے ’مکمل بزدلانہ‘ قرار دیا ہے۔انھوں نے اپنے بیان میں کہا’’آج صبح اینیسی کے ایک پارک میں مکمل بزدلانہ حملہ کیا گیا ہے۔بچّے اور ایک بالغ اپنی زندگی کے لیے لڑ رہے ہیں۔ قوم اس پر حیران ہے۔ ہماری ہمدردیاں زخمیوں کے ساتھ ساتھ ان کے اہل خانہ اور ہنگامی خدمات کے ساتھ ہیں‘‘۔

فرانسیسی میڈیا میں حملے کی خبر پھیلنے کے بعد وزیر اعظم ایلزبتھ بورن کے دفتر نے اعلان کیا کہ وہ جائے وقوعہ کا دورہ کر رہی ہیں اور قومی پارلیمان کے ارکان نے ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی ہے۔

پولیس ذرائع نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر اے ایف پی کو بتایا کہ چاقو کے حملے میں ملوّث مشتبہ شخص نے پولیس کو بتایا کہ وہ شامی پناہ گزین ہے۔اس مشتبہ حملہ آور کی شناخت کی تصدیق کی جارہی ہے اور اس امرکی تصدیق نہیں کی گئی ہےکہ آیا سکیورٹی سروسز کو اس کے بارے میں پہلے سے کچھ معلوم تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں