نیویارک فضائی آلودگی، نظام زندگی معطل روشنیوں کا شہر دھویں میں ڈوب گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

کینیڈا میں لگنے والی خوفناک آگ کے اثرات ہزاروں کلو میٹر دور امریکی شہر نیویارک اور دوسرے علاقوں میں بھی محسوس کیے جا رہے ہیں۔ نیو یارک سٹی میں فضائی آلودگی کو دنیا کے کسی بھی شہر کے مقابلے میں بدترین درجہ دیا گیا ہے کیونکہ کینیڈا سے جنگل کی آگ کا دھواں وہاں تیزی سے پھیل رہا جس سے شہر پر نارنجی رنگ چھایا ہوا ہے۔ شہریوں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ ماسک پہن کر گھروں سے باہر نکلیں۔

بدھ کی سہ پہر تک ہوا کےمعیار کی پیمائش کرنے والے ادارے’ AQI‘نے نیویارک میں ہوا کی آلودگی کی سطح 342 سطح تھی جسے آبادی کے لیے "خطرناک" قرار دیا ہے۔

شہر میں اسکول اب بھی کام کر رہے ہیں لیکن انہوں نے بیرونی سرگرمیاں معطل کر دی ہیں کیونکہ دن بھر ہوا کا معیار خراب رہنے کی توقع ہے۔

بدھ کے روز فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن نے دھوئیں کی وجہ سے نیویارک کے لاگارڈیا ہوائی اڈے کے لیے جانے والی کچھ پروازوں کو گراؤنڈ کر دیا، کیونکہ مرئیت کی وجہ سے نیوارک لبرٹی انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر بھی تاخیر ہوئی تھی۔

نیویارک کے گورنر کیتھی ہوچول نے کہا کہ ہوا کا خراب معیار ایک "ہنگامی بحران" ہے اور خبردار کیا کہ یہ اگلے چند دنوں تک جاری رہ سکتا ہے۔

"اگر آپ اندر رہ سکتے ہیں تو اندر ہی رہیں۔ موجودہ صورتحال لوگوں کی صحت کو نقصان پہنچا رہی ہے۔"

میجربیس بال لیگ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس نے آج کے کھیل ملتوی کر دیے ہیں۔ بدھ کو سٹیزنز بینک پارک میں "ڈیٹرائٹ ٹائیگرز" اور "فلاڈیلفیا فلیز" اور یانکی اسٹیڈیم میں "شکاگو وائٹ سوکس" اور "نیو یارک یانکیز" کے درمیان ہونے والے مقابلے ملتوی کردیے گئے ہیں۔

لیگ نے کہا کہ"دونوں شہروں میں واضح طور پر خطرناک ہوا کے معیار کے بارے میں طبی اور موسمیاتی ماہرین اور تمام متاثرہ کلبوں کے ساتھ دن بھر بات چیت کے بعد یہ مقابلے ملتوی کیے گئے ہیں ۔"

شہر کے عہدیداروں نے آبادی کو بیرونی سرگرمیوں کو محدود کرنے کا مشورہ دیا ہے اور متنبہ کیا ہے کہ بچوں، بوڑھوں اور سانس کے مسائل میں مبتلا افراد کو خاص خطرہ لاحق ہے۔

جنگل کی آگ کا دھواں PM2.5 ذرات کو خارج کرتا ہے جو پھیپھڑوں میں داخل ہوتے ہیں اور صحت کے مسائل جیسے کہ دمہ اور برونکائٹس کا سبب بنتے ہیں۔ نیویارک شہر میں PM2.5 کا ارتکاز اس وقت عالمی ادارہ صحت کی طرف سے جاری کردہ ہوا کے معیار کے لیے سالانہ گائیڈ لائن ویلیو سے 15 گنا زیادہ ہے۔

نیویارک اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ آف انوائرمینٹل کنزرویشن نے تمام پانچوں کالونیوں کے لیے صحت مند ہوا کے معیار کی ایڈوائزری جاری کی ہے۔ شہر کے حکام نے کہا کہ وہ توقع کرتے ہیں کہ وارننگ اگلے چند دنوں تک نافذ العمل رہے گی لیکن انہوں نے مزید کہا کہ دھواں دار حالات کا اندازہ لگانا بہت مشکل ہے۔

نیویارک نے بھی ہوا کے معیار کی صحت کے مشورے کو جمعرات تک بڑھا دیا۔

کینیڈا اپنے اب تک کے بدترین جنگلی آتش زدگیکا سامنا کر رہا ہے۔ کینیڈا کے تقریباً تمام صوبوں اور علاقوں میں 400 سے زیادہ جنگلات جل رہے ہیں۔ وفاقی حکام نے گذشتہ ہفتے کہا تھا کہ آگ نے 6.7 ملین ایکڑ سے زیادہ رقبہ کو جلا دیا ہے اور اب تقریباً 26,000 افراد نے نقل مکانی کی ہے۔

کینیڈا میں جنگل کی آگ سے اٹھنے والا دھواں جنوب کی طرف بڑھ گیا ہے اور پورے ملک میں فضائی آلودگی کی وارننگ جاری کی گئی ہے۔

جنوب مشرقی مینیسوٹا مشی گن کے بالائی جزیرہ نما کے کچھ حصوں اور وسکونسن کے علاقوں کے لیے ہوا کے معیار کی وارننگ کے ساتھ وسط مغرب میں لاکھوں لوگ ہوا کے معیار کی شدید صورتحال کا سامنا کر رہے ہیں۔ نیو انگلینڈ کے بیشتر حصوں میں بھی ہوا کے معیار کے الرٹس بھی پوسٹ کیے گئے ہیں۔

نیشنل ویدر سروس کا کہنا ہے کہ توقع ہے کہ دھواں کئی روز جاری رہے گا اور مزید مغربی علاقوں کی طرف بڑھے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں