ویت نام: دو پولیس اسٹیشنوں میں فائرنگ، متعدد افراد ہلاک اور زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ویت نام کے علاقے سنٹرل ہائی لینڈز میں دو پولیس ہیڈکوارٹرز پر فائرنگ کے نتیجے میں متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوگئے ہیں۔

ویت نام کے سرکاری میڈیا نے امن عامہ کی وزارت کے ترجمان ٹو این ایکسو کے حوالے سے بتایا ہے کہ
صوبہ ڈاک لک کے ضلع کیو کوئن میں فائرنگ کے واقعے کے سلسلے میں سولہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

ٹواین ایکسو نے مزید کہا کہ حملہ آوروں کے ہاتھوں یرغمال دو افراد کو رہا کرالیا گیا جبکہ ایک اور شخص خود کو آزاد کرانے میں کامیاب رہا ہے۔

ویت نام کی امن عامہ کی وزارت کی سرکاری ویب سائٹ کے مطابق ای آ ٹیو اور ای آ کٹور کے علاقوں میں واقع دونوں پولیس ہیڈکوارٹرز پر اتوار کو علی الصباح حملے کیے گئے تھے۔

ویب سائٹ کا کہنا ہے کہ پولیس، مقامی حکام اور شہریوں سمیت متعدد افراد ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں لیکن انھوں نے مہلوکین اور زخمیوں کے درست اعداد و شمار فراہم نہیں کیے۔تفتیش کار مزید مشتبہ افراد کی تلاش کر رہے ہیں۔

سنٹرل ہائی لینڈز میں متعدد نسلی اقلیتیں آباد ہیں۔اس کو ویت نام کی آمرانہ حکومت کے لیے ایک حساس علاقہ سمجھا جاتا ہے اور یہ طویل عرصے سے زمین کے حقوق سمیت دیگر معاملات پر بدامنی کا گڑھ رہا ہے۔

واضح رہے کہ ویت نام کی دہائیوں پر محیط جنگ کے دوران میں اس علاقے کے کچھ قبائل نے ،جنہیں اجتماعی طور پر مونٹاگنارڈز کے نام سے جانا جاتا ہے، امریکا کے حمایت یافتہ جنوبی علاقے کا ساتھ دیا تھا۔ کچھ لوگ زیادہ خود مختاری کا مطالبہ کر رہے ہیں جبکہ بیرون ملک مقیم لوگ اس علاقے کی ویت نام سے آزادی کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

سرکار کے زیرانتظام بعض میڈیا اداروں نے اتوار کے روز فائرنگ کے اس واقعے کے بارے میں اپنی رپورٹس اشاعت کے بعد واپس لے لی تھیں اور کئی گھنٹے کے بعد انھیں دوبارہ شائع کیا ہے۔

واضح رہے کہ ویت نام میں اسلحہ سے تشدد کے واقعات عام نہیں ہیں اور وہاں ایسے کسی واقعہ کو انتہائی غیر معمولی سمجھا جاتا ہے۔شہریوں پرآتشیں اسلحہ رکھنے پر پابندی عاید ہے،اسلحہ کی ملکیت کو غیر قانونی سمجھا جاتا ہے اور ہتھیاروں کی بلیک مارکیٹ محدود ہے۔جنوری 2020 میں ہو چی منہ شہر کے مضافات میں مرغ لڑانے پر غیرقانون جوے بازی کے نتیجے میں چار افراد کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔

یادرہے کہ سنہ 2016 میں فائرنگ کے ایک اور واقعے میں شمالی صوبہ ین بائی میں دو اعلیٰ عہدے داروں کو ان کے دفتر میں ایک ساتھی نے ہلاک کر دیا تھا۔اس کے بعد اس مسلح شخص نے خود کو گولی مار لی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں