چوہوں نے جنوں اور فرشتوں کے شہر پر حملہ کردیا، ان کے ساتھ رہنا ہوگا: پیرس میونسپلٹی

فرانس کے دارالحکومت پیرس میں تقریباً 50 لاکھ چوہے رہتے یا پیرس کے ہر شہری کے لیے لگ بھگ 2 چوہے موجود

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فرانس کے دارالحکومت روشنی کے شہر پیرس کی سجاوت اور تزئین کا حصہ چوہے بھی بن چکے ہیں۔ یہ وہ شہر ہے جہاں سالانہ 44 ملین افراد آتے ہیں۔ چوہوں کی تعداد اس قدر بڑھ چکی ہے کہ یہ پیرس کی سڑکوں پر یلغار کر چکے ہیں اور اب وہاں کے رہائشیوں اور دیکھنے والوں کا یکساں مقابلہ کر رہے ہیں۔ یہ واقعہ وہاں کے رہائشیوں کے لیے کوئی نیا نہیں ہے۔ پیرس کے رہائشی چوہوں کی موجودگی کے حوالے سے نفرت انگیز نقطہ نظر سے تھک چکے ہیں۔ تاہم اس حوالے سے اب نئی بات جو سامنے آئی وہ اس شہر کے میئر کا حیران کن بیان ہے۔

پیرس کے میئر این ہیڈلگو نے تجویز دی ہے کہ ان چوہوں کے ساتھ ’’ بقائے باہمی‘‘ کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دے دینا چاہیے۔

یاد رہے فرانسیسی دارالحکومت میں بسنے والے لاکھوں چوہوں سے نمٹنے کے لیے مقامی حکام برسوں سے کوشش کر رہے ہیں لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ ویب سائٹ ’’ deratisateur.com ‘‘ کے مطابق اس وقت دارالحکومت پیرس میں تقریباً 5 ملین چوہے رہتے ہیں۔ یعنی پیرس میں مقیم ہر فرد کے مقابلہ میں دو چوہے موجود ہیں۔

چوہا
چوہا

پیرس میونسپلٹی جسے پیرس کی گلیوں میں چوہوں کے پھیلاؤ اور اس سے آبادی کو پہنچنے والے نقصان کی وجہ سے بڑی تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے نے مسئلے کا حل یہ نکالا ہے کہ پیرس کے باسیوں کو چوہوں کے ساتھ بقائے باہمی کا طریقہ اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔ اس حوالے سے یاد رکھنے کی بات یہ بھی ہے کہ کئی ماہرین ماحولیات چوہوں کو مارنے کی مخالفت کرتے ہیں۔

گزشتہ جمعرات کو پیرس کی میونسپلٹی کے ماحولیاتی نمائندے این سویرس نے کہا کہ ہم نے اس حالیہ عرصے میں مادام میئر کے ساتھ مل کر بقائے باہمی کے معاملے پر ایک کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس حوالے سے اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ چیزیں پیرس کے لوگوں کے لیے ناقابل برداشت نہ ہوں۔

منتخب عہدیدار کا خیال ہے کہ چوہوں سے عوامی صحت کو کوئی خطرہ لاحق نہیں ہے۔ لیکن اس کا یہ مطلب نہیں ہے کہ چوہوں کو شہر میں گھومنے کی اجازت ہے۔

چوہا
چوہا

پیرس کے ڈپٹی میئر نے کہا ہے کہ میونسپلٹی "شعور پیدا کرے گی" اور ہزاروں کچرے کی ٹوکریاں لائے گی کیونکہ باہر کھانا چھوڑ دینا بھی چوہوں کے بڑھنے اور باہر نکلنے کی سب سے بڑی وجہ ہے۔

حزب اختلاف کے رہنماؤں نے چوہوں کو مارنے کی مخالفت کرنے والے افراد کے موقف کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان چوہوں کی موجودگی پیرس کے باشندوں کی زندگیوں کو نقصان پہنچا رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں