یو اے ای نے بیروزگاری انشورنس حاصل کرنے کی ڈیڈ لائن میں توسیع کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

متحدہ عرب امارات کے حکام نے بیروزگاری انشورنش کے حصول کے لئے دی جانے والی ڈیڈ لائن میں تین ماہ کی توسیع کر دی ہے۔

امارات کی وزارت انسانی وسائل نے ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ ملازمین کو یکم اکتوبر 2023 تک مہلت دے دی گئی ہے کہ وہ بیروزگاروں کے لئے شروع کی جانے والے انشورنس سے فائدہ اٹھا سکیں۔

وزارت نے اپنے اعلان میں کہا کہ" اب تمام ملازمین یکم اکتوبر سے قبل انشورنس سکیم کا حصہ بن سکتے ہیں تاکہ اس کے بعد 400 درہم کے جرمانے سے بچ سکیں۔"

اس سے قبل وزارت نے یکم جولائی کو انشورنس حاصل کرنے کی ڈیڈ لائن قرار دیا تھا۔

یو اے ای حکومت اور نجی شعبے کو ملازمین کو یہ ہدایت کی گئی تھی کہ اکتوبر 2022 میں متعارف کروائی جانے والی انشورنس سکیم برائے بیروزگار افراد میں شمولیت اختیار کریں۔

اس پروگرام کا مقصد کسی غیر متوقع صورتحال میں نوکری چلے جانے کے بعد نجی اور سرکاری ملازمین کو بآسانی ماہانہ معاوضہ دیا جا سکے۔

یہ معاوضہ تین ماہ تک دیا جائے گا۔ اس معاوضے کے لئے شرط یہ ہے کہ اس سے قبل کم از کم ایک سال کے لئے انشورنس میں شمولیت لازم ہے۔

انشورنس کی قیمت کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے:

4350 ڈالر[16 ہزار درہم] سے کم کی تنخواہ لینے والے افراد ہر ماہ پانچ درہم یا 1.3 ڈالر ادا کریں گے۔اس کیٹگری کے افراد کے لئے معاوضۃ 2720 ڈالر یا 10 ہزار درہم ہے۔

اس کے علاوہ دوسری کیٹگری میں 4350 ڈالر یا 16 ہزار درہم سے زائد تنخواہ والے افراد کو ہر ماہ دس درہم یا 2.72 ڈالر ادا کرنا ہوں گے۔ اس کیٹگری کے افراد کو 5440 ڈالر یا 20 ہزار درہم تک معاضہ دیا جائے گا۔

یو اے ای نے حالیہ اصلاحات کے نتیجے میں نوکری سے ہاتھ دھونے پر ویزا منسوخ ہونے کے دورانیے میں توسیع کرتے ہوئے قیام کی مدت 30 دن سے بڑھا کر چھ مہینے تک کر دی ہے تاکہ ملازمین بآسانی نئی ملازمت تلاش کر سکیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں