حج 1444

سعودی عرب : شاہ سلمان نے 1300 عازمین حج کی میزبانی کا حکم دے دیا

ان عازمین کا تعلق دنیا کے مختلف براعظموں کے 90 سے زیادہ ممالک سے ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے اس سال 1444 ہجری کو حج کی ادائیگی کے لیے دنیا کے مختلف براعظموں کے 90 سے زائد ممالک کے (1,300) عازمین کی میزبانی کا باعزت حکم جاری کیا۔

یہ حج کے لیے خادم حرمین شریفین کے مہمان پروگرام کا حصہ ہے، جس پر عمل درآمد اور نگرانی وزارت اسلامی امور، دعوت و رہنمائی کرتی ہے۔

اس موقع پر اسلامی امور، دعوت و رہنمائی کے وزیر، اور مہمان پروگرام کے نگران ڈاکٹر عبداللطیف بن عبدالعزیز آل الشیخ نے خادم حرمین شریفین کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ خادم حرمین شریفین کا یہ فرمان اس پیغام کی عکاسی کرتا ہے جو سعودی عرب اسلام اور مسلمانوں کی خدمت میں پیش کرتا ہے اور جو عالم اسلام کے درمیان اتحاد اور بھائی چارے کے رشتوں کو مزید گہرا کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کے مختلف براعظموں میں ہزاروں مسلمانوں کو معیاری اور ممتاز خدمات کے مربوط نظام کے مطابق حج کرنے کے قابل بنانے کا یہ سخاوت مندانہ اقدام سالانہ روایت ہے۔

انہوں نےبتایا کہ وزارت نے پروگرام کے جنرل سیکرٹریٹ کے ذریعے، شاہی فرمان کے نفاذ کے تمام طریقہ کار کو سفارت خانوں اور بیرون ملک وزارت کے مذہبی اتاشیوں کے ساتھ ہم آہنگی اور انضمام کے ساتھ مکمل کر لیا ہے۔

ان میں پروگرام کے لیے مستفید ہونے والوں کے انتخاب سے لے کر ان کے سفر ، ویزا ، اور اپنے ملک سے مقدس سرزمین پر آمد اور مذہبی فرائض کی ادائیگی تک تمام خدمات کو مربوط کرنا شامل ہے۔

وزیر ڈاکٹر عبداللطیف الشیخ نے نشاندہی کی کہ اس پروگرام کو جو چیز نمایاں کرتی ہے وہ یہ ہے کہ یہ دوسرے ممالک کے بہت سے مسلمانوں کا خواب پورا کرتا ہے جو پچھلے سالوں میں اس پروگرام میں شامل نہیں تھے۔

اس لیے وزارت یہ سالانہ منصوبہ نافذ کرتی ہے جو مختلف ممالک کی قومیتوں کی بڑی تعداد کو شامل کرنے کا پروگرام شامل ہے جنہوں نے پہلے حج نہیں کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں