حج 1444

سعودی ہلال احمر کے 2300 سے زیادہ رضاکار عازمین حج کی مدد کو تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی ہلال احمر نے 2300 سے زیادہ مرد و خواتین رضاکاروں کو فریضۂ حج ادا کرنے والے عازمین کو ہنگامی خدمات مہیا کرنے کے لیے تعینات کیا ہے۔

العربیہ کی رپورٹ کے مطابق سعودی ہلال احمر کے مطابق 2200 سے زیادہ ہیلتھ پریکٹیشنرز ہنگامی صورت حال میں عازمین حج کی خدمت کو تیار ہیں اور 240 سے زیادہ زمینی اور فضائی ایمبولینسیں بھی تیار رکھی جائیں گی۔

مدینہ منورہ میں مسجد نبویﷺ میں اور اس کے ارد گرد ہنگامی صورت حال سے نمٹنے کے لیے 700 سے زیادہ رضاکار کام کریں گے۔رضاکار مکہ مکرمہ میں المسجد الحرام کی اہم جگہوں میں بھی چوبیس گھنٹے کام کریں گے۔

اس سال حج آپریشنل پلان اب تک کا سب سے بڑا منصوبہ ہے اور عازمین حج کی تعداد کرونا وائرس کی وبا سے پہلے کی سطح تک پہنچ جائے گی۔کووڈ-19 کی وجہ سے سعودی عرب میں پابندیوں کے نفاذ سے قبل 2019ء میں 26 لاکھ سے زیادہ افراد نے فریضہ حج ادا کیا تھا۔

حجاج کرام کی رہنمائی اور معاونت کے لیے آیندہ ہفتے میں 14 ہزار ملازمین پر مشتمل عملہ کے علاوہ 8 ہزار سے زیادہ رضاکار بھی تعینات کیے جائیں گے۔مکہ مکرمہ میں سالانہ حج 26 جون سے شروع ہوگا۔

صدارت عامہ برائے امورِ مقدسہ کے صدر ڈاکٹر عبدالرحمٰن السدیس نے قبل ازیں کہا تھا کہ کرونا وبا کے خاتمے اور لاکھوں کی تعداد میں عازمین کی واپسی کے اعلان کے بعد رواں سال حج سیزن میں سب سے بڑا آپریشنل پلان ترتیب دیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں