حزب اللہ کے ارکان لبنانی فوج میں دراندازی کرکے سہولیات حاصل کر رہے: مغربی ذرائع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مغربی ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ حزب اللہ کے ارکان لبنانی فوج میں دراندازی کرکے سہولیات حاصل کر رہے ۔ مغرب کے ذرائع نے ’’ العربیہ‘‘ کو بتایا کہ ملیشیا ’’حزب اللہ‘‘ دہشت گردی اور عسکری مقاصد کے حصول کے لیے لبنانی فوج کے انٹیلی جنس انفراسٹرکچر کا فائدہ اٹھا رہی ہے۔ ذرائع نے کہا کہ حزب اللہ پارٹی نے لبنان کے سرکاری انٹیلی جنس اداروں میں اپنے ایجنٹوں کو بھرتی کیا۔

ذرائع نے بتایا کہ گزشتہ ایک سال کے دوران حزب اللہ نے ایجنٹ "ایچ ایم " کے ذریعے لبنانی فوج کے لیے انٹیلی جنس آلات میں دراندازی کی۔ اس دراندازی کے ذریعہ ملیشیا نے مسلح افواج کو فراہم کی جانے والی مغربی امداد سے بھی فائدہ اٹھایا ہے۔ ذرائع کے مطابق حزب اللہ بیروت ایئرپورٹ اور لبنانی بحریہ کے ریڈار کو فوج کی قیادت کے علم میں لائے بغیر استعمال کر لیتی ہے۔

واضح رہے حزب اللہ نے گزشتہ ماہ میزائلوں، مشین گنوں اور ٹینکوں کے ساتھ اپنی افواج کا جائزہ لیا تھا۔

حزب اللہ ملیشیا کے سیکڑوں ارکان نے جنوبی لبنان میں بڑے پیمانے پر فوجی مشقیں کیں۔ فوجی مشقیں زمینی حملے کی نقل پر مشتمل تھیں۔ حزب اللہ ارکان میزائل اپنے کندھوں پر اٹھائے ہوئے تھے۔ یہ افراد پیلے رنگ کے حزب اللہ کے جھنڈے بھی لہرا رہے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں