چیچن صدر قدیروف کے زیر قیادت فورسز واگنر ملیشیا کی بغاوت کچلنے میں تعاون کے لیے تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

چیچن رہنما رمضان قدیروف نے کہا ہے کہ ان کی افواج واگنر کے سربراہ ایوگنی پریگوزن کے زیر قیادت روسی ریاست کے خلاف بغاوت کو ناکام بنانے میں روسی فوج کو مدد دینے اور وقتِ ضرورت سخت طریقے استعمال کرنے کو تیار ہیں۔

قدیروف نے ہفتے کے روز ایک بیان میں پریگوزن کے رویّے کو "پیٹھ میں چاقو" کا وار قرار دیا اور روسی فوجیوں پر زور دیا کہ وہ کسی بھی "اشتعال انگیزی" کے آگے نہیں جھکیں۔

انھوں نے کہا کہ ’’چیچن یونٹ ’’کشیدگی والے علاقوں‘‘کی طرف بڑھ رہے ہیں اور وہ روس کی اکائیوں کے تحفظ اور ریاست کے دفاع کے لیے کام کریں گے‘‘۔

رمضان قدیروف روسی صدر ولادی میر پوتین کے قریبی اتحادی سمجھے جاتے ہیں اور وہ چیچنیا میں مضبوط فوجی دستوں کی کمان کرتے ہیں۔ انھیں پہلے پریگوزن کے اتحادی کے طور پر دیکھا جاتا تھا اور وہ بھی روسی فوج کی قیادت پر واگنر ملیشیا کے سربراہ کی طرح تنقید کرتے رہتے ہیں۔

تاہم، حالیہ ہفتوں میں، قدیروف سے وابستہ چیچن کمانڈروں نے روسی وزارتِ دفاع کے خلاف پریگوزن کی باقاعدگی سے اشتعال انگیزی پر تنقید شروع کر دی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں