امریکا کی روس کے واگنر گروپ سے وابستہ ایک شخص اور چاراداروں پر پابندیاں عاید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکا نے منگل کے روز وسطی افریقی جمہوریہ اور روس میں قائم کمپنیوں اور ایک شخص پر واگنر گروپ کی کرائے کی فوج کو مالی اعانت مہیا کرنے کے الزام میں پابندیاں عاید کردی ہیں اورکہا ہے کہ یہ کمپنیاں اس مقصد کے لیے سونے کے غیر قانونی لین دین میں ملوّث ہیں۔

امریکی محکمہ خزانہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس نے واگنر گروپ اور اس کے رہنما ایوگینی پریگوزن سے تعلق رکھنے والی چار کمپنیوں پر پابندیاں عاید کی ہیں اور کہا ہے کہ سونے کے غیر قانونی لین دین سے واگنر کو یوکرین اور افریقا سمیت ممالک میں اپنی مسلح ملیشیا کو برقرار رکھنے اور وسعت دینے کے لیے مالی اعانت ملتی ہے۔

محکمہ خزانہ کے انڈر سیکریٹری برائے دہشت گردی اور مالیاتی انٹیلی جنس برائن نیلسن نے ایک بیان میں کہا کہ واگنرگروپ وسطی افریقی جمہوریہ اور مالی جیسے ممالک میں قدرتی وسائل کا استحصال کرکے اپنی ظالمانہ کارروائیوں کی مالی اعانت کرتا ہے۔انھوں نے کہا کہ امریکا واگنر گروپ کے آمدن کے ذرائع کو نشانہ بنانے کا سلسلہ جاری رکھے گا تاکہ افریقا، یوکرین اور دوسرے مقامات پراس کی توسیع اور تشدد کو کم کیا جا سکے۔

امریکی محکمہ خارجہ نے کہا ہے کہ واگنر کے خلاف کسی بھی کارروائی کا گذشتہ اختتام ہفتہ پر روس میں ہونے والی بغاوت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

واگنرکے جنگجو لیبیا، شام، وسطی افریقی جمہوریہ، مالی اور دیگر ممالک میں لڑ چکے ہیں اور یوکرین میں گذشتہ 16 ماہ سے جاری جنگ میں انھوں نے سب سے خونریز جھڑپوں میں حصہ لیا ہے۔اس مسلح گروپ کی بنیاد 2014 میں اس وقت رکھی گئی تھی جب روس نے یوکرین کے جزیرہ نما کریمیا پر قبضہ کر لیا تھا اور یوکرین کے مشرقی خطے ڈونبس میں روس نواز علاحدگی پسندوں کی حمایت شروع کر دی تھی۔

امریکی محکمہ خزانہ نے وسطی افریقی جمہوریہ میں قائم میڈاس ریسورسز سارلو اور ڈیامویل ایس اے یو، انڈسٹریل ریسورسز جنرل ٹریڈنگ اور روس میں قائم محدود کمپنی ڈی ایم کے خلاف منگل کے اقدام میں پابندیاں عاید کی ہیں۔

واشنگٹن نے واگنر گروپ میں ایک مبیّنہ ایگزیکٹو روسی شہری آندرے نکولائیوچ ایوانوف پر بھی پابندیاں عاید کی ہیں اور الزام عاید کیا کہ انھوں نے مالی میں ہتھیاروں کے معاہدوں، کان کنی کے خدشات اور واگنر کی دیگر سرگرمیوں سے متعلق اس افریقی ملک کے سینیر حکام کے ساتھ مل کر قریبی کام کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں