فرانس:پرتشدد احتجاج کےدوران صدر میکروں کی موسیقی کنسرٹ میں رقص کی ویڈیو وائرل

متنازع ویڈیو پر عوامی حلقوں کی طرف سے شدید غم وغصہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

فرانس میں دو روز قبل پولیس کی فائرنگ سے ایک نوجوان کی ہلاکت کے واقعے کے بعد جہاں ملک گیر احتجاجی مظاہرے ہو رہے ہیں وہیں صدر عمانویل میکروں کی ایک متنازع ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں انہیں مبینہ طور پر ایک موسیقی کنسرٹ میں محو رقص دیکھا جا سکتا ہے۔ تاہم حکومت کی طرف سے اس ویڈیو پر سرکاری سطح پر کسی قسم کا رد عمل ظاہر نہیں کیا گیا۔

سوشل میڈیا پر پوسٹ ہونے والی اس ویڈیو پر صارفین کی طرف سے سخت رد عمل سامنے آیا ہے اور پہلے ہی حکومت سے ناراض عوامی حلقوں نے صدر کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل فرانس میں نانٹیز کے مقام پر پولیس کی فائرنگ سے ایک افریقی نژاد نوجوان جاں بحق ہوگیا تھا۔ اس واقعے کے بعد بڑے پیمانے پر احتجاجی مظاہرے پھوٹ پڑے تھے۔ پولیس نے مظاہروں کو روکنے کے لیے کریک ڈاؤن کیا ہے جس میں اب تک تقریبا سات سو کے قریب افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

کل جمعرات کو صدر میکروں نے نوجوان کے قتل کے بعد پرتشدد احتجاج روکنے کے لیے کرائسز سیل کے ساتھ ہنگامی میٹنگ کی تھی جس میں حکومت کے سینیر وزراء بھی موجود تھے۔

فرانس کے وزیر داخلہ جیرالڈ درمانین نے انکشاف کیا کہ ’نایل‘ نامی نوجوان کے قتل کے بعد پرتشدد مظاہروں کے دوران 150 افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں