کرونا وبا نے بچوں کی ذہنی صحت کو متاثر کیا:عالمی ادارہ صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عالمی ادارہ صحت نے انکشاف کیا ہے کہ کرونا وبا نے بچوں اور نوعمرافراد کی ذہنی صحت کو متاثر کیا ہے۔

عالمی ادارہ صحت ’ڈبلیو ایچ او] نے یورپ میں اپنے علاقائی دفتر کی طرف سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ اس وبا نے دنیا بھر میں بچوں اور نوعمربچوں کی ذہنی صحت کو بہت متاثر کیا ہے۔ اسکولوں میں بڑی عمر کی لڑکیاں سب سے زیادہ متاثر ہونے والے گروہوں میں شامل تھیں۔

تنظیم نے کہا کہ اسے طویل مدتی نتائج کو کم کرنے کے لیے ہدفی مداخلت کی ضرورت اور نفسیاتی معاونت کے نظام کی ترقی پر توجہ دینی چاہیے۔

یورپ میں تنظیم کے علاقائی دفتر کے ڈائریکٹر ہنس کلوگ نے کہا کہ یہ نتائج 2021 اور 2022 کے درمیان کیے گئے سروے پر مبنی ہیں۔

اس سروے میں عمر، جنس، معاشی حیثیت، سماجی معاونت کے ڈھانچے، کرونا وبا کے پھیلاؤ کے دوران نوعمرافراد کے اسکو کی بندش کے اثرات اور ان کی ذہنی صحت پر مذکورہ عوامل کے اثرات کا تجزیہ کیا گیا۔

کلوگ نے وضاحت کی کہ وبائی بیماری کا بچوں پر مختلف اثر پڑ رہا ہے، خاص طور پر انتہائی پسماندہ پس منظر کے بچے، جن کے اسکول طویل مدت کے لیے بند ہیں اور جن کو گھر اور اسکول میں مدد کی کمی ہے وہ ذہنی طور پر متاثر ہوئے ہیں۔ اسکول کی بڑی عمر کی طالبات سب سے زیادہ متاثر ہوئیں

تنظیم کی طرف سے جاری کردہ نئے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ اسکول کی بڑی عمر کی لڑکیوں کی ذہنی صحت زیادہ متاثر ہوئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں