برازیل کے اسٹرائیکر فرمینو لیورپول چھوڑنے کے بعد سعودی عرب کے الاہلی کلب میں شامل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برازیل کے اسٹرائیکر رابرٹو فرمینو لیورپول کو خیربادکہنے کے بعد آزادانہ ٹرانسفر پر سعودی عرب کے کلب الاہلی میں شامل ہوگئے ہیں۔

فرمینو نے الاہلی کے ٹویٹراکاؤنٹ پر جاری کردہ ایک ویڈیو میں کہا:’’میں ہمیشہ بڑی ٹیموں کے لیے کھیلا، اب میں الاہلی میں ہوں‘‘۔

31 سالہ کھلاڑی نے الاہلی کلب کے ساتھ تین سال کے معاہدے پر دست خط کیے ہیں اور وہ گول کیپر ایڈورڈ مینڈی کے ساتھ اس ٹیم کا حصہ ہوں گے۔انھوں نے چیلسی کے ساتھ تین سیزن کھیلنے کے بعد پریمیئر لیگ چھوڑ دی تھی۔

الاہلی کی 2022-2023 کی مہم سیکنڈ ڈویژن میں گزارنے کے بعد سعودی پرو لیگ میں واپسی ہوئی ہے لیکن جنوبی افریقا کے پٹسو موسیمین کی روانگی کے بعد ٹیم اب بھی کوچ کے بغیر ہے۔

فرمینو نے 2015 میں لیورپول میں شمولیت اختیار کی تھی اور ٹیم کو چیمپیئنز لیگ، ایف اے کپ اور پریمیئر لیگ ٹائٹل جیتنے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

برازیل کے بین الاقوامی کھلاڑی نے مئی کے آخر میں اینفیلڈ کو الوداع کہا اور سیزن کے آخری میچ میں کلب کے لیے اپنا 111 واں گول اسکور کیا تھا۔

فرمینو حالیہ ہفتوں میں سعودی پرو لیگ میں منتقل ہونے والے ہائی پروفائل کھلاڑیوں کی طویل فہرست میں شامل ہو گئے ہیں۔اس میں بیلن ڈی اور جیتنے والے کریم بینزیما، این گولو کانٹے اور روبن نیوس جیسے کھلاڑی کرسٹیانو رونالڈو کے نقش قدم پر چلتے ہوئے سعودی عرب میں کھیلنے کے لیے آئے ہیں۔رونالڈو جنوری میں النصر کلب میں شامل ہوئے تھے۔

گذشتہ ماہ سعودی پبلک انویسٹمنٹ فنڈ (پی آئی ایف) نے اسپورٹس کلبوں کے سرمایہ کاری اور نج کاری منصوبے کا اعلان کیا تھا۔ان میں لیگ چیمپیئنز الاتحاد، الاہلی، النصر اور الہلال شامل تھے۔

پی آئی ایف ان چار کلبوں میں سے ہر ایک کے 75 فی صد کے مالک ہیں، جبکہ ان کی متعلقہ غیر منافع بخش فاؤنڈیشنز ہر ایک کے 25 فی صد کی مالک ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں