متحدہ عرب امارات کے راکیزکی اسرائیل کی آئی ایم اے کے ساتھ تعاون کا سمجھوتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

متحدہ عرب امارات اور اسرائیل راس الخیمہ اکنامک زون (راکیز) اور اسرائیلی مینوفیکچررز ایسوسی ایشن (آئی ایم اے) نے بدھ کو ایک سمجھوتے پر دست خط کیے ہیں۔اس کے تحت وہ باہمی سرمایہ کاری اور مینوفیکچرنگ کو وسعت دینے پر غور کریں گے۔

یواے ای کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام نے خبر دی ہے کہ مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) میں دونوں فریقوں پر زور دیا گیا ہے کہ وہ سرمایہ کاری کے مواقع پیدا کرنے اور صنعتی کمپنیوں کے آپریشنز کو وسعت دینے کے لیے تعاون کریں گے۔

متحدہ عرب امارات اور اسرائیل نے اگست 2020 میں امریکا کی ثالثی میں دوطرفہ تعلقات کو معمول پر لانے پراتفاق کیا تھا اور دونوں نے اسی سال اکتوبر میں اس منصوبے کی توثیق کی تھی۔

راکیز کے سی ای او رامی جلاد نے کہا:’’یہ ضروری ہے کہ ہم متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان تعاون کی سطح کو بڑھانے کی طرف آگے بڑھیں‘‘۔

آئی ایم اے میں جدید ٹیکنالوجی، ٹیکسٹائل، فیشن، کیمیکلز، فارماسیوٹیکل، ماحولیات، خوراک، دھاتیں، بجلی، بنیادی ڈھانچے اور صارفین کی مصنوعات جیسے شعبوں میں کمپنیاں شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں