سعودی عرب کے آسمان پر نظر آنے والی روشنی کی ٹرین کیا تھی؟

یہ سٹار لنک سیٹلائٹس تھے جو زمین پر دور دراز علاقوں میں انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے کے کام آتے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے آسمان پر روشنی کی لکیر کے نمودار ہونے نے بڑے سوالات اٹھادئیے تھے۔ ایک ویڈیو کلپ میں مملکت کے آسمان میں ایک عجیب و غریب جسم کو فلمایا گیا۔ یہ روشنی سے بنی ٹرین نما شکل تھی جو تیزی سے خلاؤں میں آگے بڑھ رہی تھی۔ اس ویڈیو کو دیکھ کر لوگوں نے بڑے بیمانے پر اس عجیب چیز پر تبصرے کیے۔
ماہر فلکیات ڈاکٹر خالد الزعاق نے اس معاملے کی وضاحت کی۔ انہوں نے ویڈیو کلپ کو اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر شائع کیا اور کہا کہ یہ سٹار لنک سیٹلائٹس ہیں جو اس ہفتے کی صبح طلوع آفتاب کے وقت آسمان کو عبور کرتے ہیں۔ یہ کئی علاقوں میں دیکھے جاتے ہیں۔
جدہ میں فلکیاتی سوسائٹی کے سربراہ انجینئر ماجد ابو زہرہ نے ’’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ کو بتایا کہ کہ سٹار لنک سیٹلائٹس کے تازہ ترین گروپ کا سعودی عرب کے آسمان پر مشاہدہ کیا گیا ہے۔ وہ بہت مرتبہ دیکھا گیا ۔ ہفتہ 8 جولائی 2023 کو فجر کے وقت ایک سیدھی لائن میں روشن پوائنٹس ٹرین کی طرح چلتے دکھائی دیے۔ اس کو دیکھ کر لوگوں نے خوف کا اظہار بھی کیا۔


ماجد ابوزھرہ نے مزید کہا کہ جمعہ07 جولائی کو سپیس ایکس نے سٹار لنک سیٹلائٹس کی ایک نئی کھیپ کو مدار میں چھوڑا ہے۔ راکٹ ’’ فالکن 9‘‘ کیلی فورنیا سے 48 سیٹلائٹس کو لے کر لانچ کیا گیا تھا۔
انہوں نے بتایا کہ سٹار لنک سیٹلائٹس کا مقصد تیز رفتار عالمی انٹرنیٹ کوریج فراہم کرنا ہے۔ یہ دیہی اور دور دراز علاقوں میں بھی انٹرنیٹ سہولت پہنچانے کے کام آتے ہیں۔ امکان ہے کہ انٹرنیٹ کنسٹریشن کو دنیا کے بیشتر حصوں کو کوریج فراہم کرنے کے لیے مدار میں کم از کم 10 ہزار سیٹلائٹس کی ضرورت ہو گی۔ دوسری طرف ماہرین فلکیات ان سیٹلائٹس سے خوش نہیں ہیں اور مطالبہ کر رہے ہیں کہ ان کی روشنی کو کم کیا جائے۔ ماہرین فلکیات کے مطابق ایسے سیٹلائٹس کی روشنی آسمان کے مشاہدات کو متاثر کر سکتی ہیں جو جدید فلکیاتی تحقیق کے لیے بہت اہم ہیں۔
ماجد نے بتایا کہ پیداوار اور لانچ کی موجودہ شرح کو دیکھتے ہوئے کہا جا سکتا ہے کہ سٹار لنک سیٹلائٹس مختصر مدت میں پوری دنیا کا احاطہ کر لیں گے۔

Advertisement
مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں