خاکروب نے امریکی لیبارٹری میں 20 سال کی سائنسی تحقیق برباد کر دی

لیبارٹری کو ایک ملین ڈالر کا نقصان، صفائی کی ذمہ دار کمپنی پر مقدمہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکا میں ایک طبی سائنسی تحقیقی مرکز میں خاکروب کی معمولی بے احتیاطی نے لیبارٹری کی بیس سال کی تحقیقات تباہ کر دی۔

امریکا میں انسٹی ٹیوٹ آف اپلائیڈ سائنسز نے اعلان کیا کہ لیبارٹریوں کو صاف کرنے کی ڈیوٹی پر مامور ایک ملازم نے لیبارٹری میں 20 سال کی سائنسی تحقیق کے نتائج کو تباہ کر دیا ہے۔

’نیویارک پوسٹ‘کے مطابق نیویارک اسٹیٹ میں رینسیلر انسٹی ٹیوٹ آف اپلائیڈ سائنسز کے درمیان معاہدے کے تحت صفائی کے لیے خدمات فراہم کرنے والی ایک پرائیویٹ کمپنی کی طرف سے رکھے گئے ملازم نے لیبارٹری کے ریفریجریٹر سے "پریشان کن الارم سگنلز" سنے جس میں سائنسی تحقیق کے لیے نمونے موجود تھے۔ اس نے ریفریجیریٹر بند کر دیا۔

فریج کے دروازے پر بیپس کو بند کرنے کا طریقہ درج تھا مگر کہا جاتا ہے کہ پڑھنے میں غلطی کے بعد اس نے سرکٹ بریکر بند کر دیا۔

وکلاء نے کہا کہ منفی 80 ڈگری سینٹی گریڈ کے درجہ حرارت پر ذخیرہ کیے گئے نمونے "خراب" ہو گئے، جس سے 10 لاکھ ڈالر کا نقصان ہوا۔

جن نمونوں کو منفی 80 ڈگری سینٹی گریڈ پر رکھا جانا چاہیے تھا، ان میں سے زیادہ تر کو تباہ کر دیا گیا۔ انہیں بچایا نہیں جا سکا۔ میں سے بعض نمونے۔ اس طرح ایک معمولی سی غلطی نے 20 سال سے زیادہ کی تحقیق کو تباہ کر دیا گیا"۔

بجلی بند کر دی

انسٹی ٹیوٹ میں پبلک سیفٹی کے عملے کی طرف سے پیش کی گئی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ کلینر نے سوچا کہ وہ سرکٹ بریکر کو آن کر رہا ہے، جب کہ اس نے اسے بند کر دیا تھا۔

جب ماہرین کو پتا چلا تو اس وقت ریفریجریٹر میں درجہ حرارت مبینہ طور پر 50 ڈگری تک بڑھ گیا تھا اور صرف مائنس 30 ڈگری سینٹی گریڈ رہ گیا تھا۔

امریکی اخبار "ٹائمز یونین" نے اطلاع دی ہے کہ صفائی کرنے والی کمپنی نے 2020 میں نیویارک کے شہر ٹرائے میں واقع "رینسیلر انسٹی ٹیوٹ آف اپلائیڈ سائنسز" کی صفائی کے عوض 1.4 ملین ڈالر کا معاہدہ کیا تھا۔

ادارے کی قانونی ٹیم کا کہنا ہے کہ کلینر کی خدمات حاصل کرنے والی کمپنی اسے صحیح طریقے سے تربیت دینے میں ناکام رہی جب کہ کمپنی نے ابھی تک اس واقعے پر کوئی تبصرہ نہیں کیا۔ ادارے کی انتظامیہ نے صفائی کرنے والی کمپنی کے خلاف مقدمہ دائر کیا ہے، کیونکہ ادارے کو ہونے والے نقصانات کا تخمینہ ایک ملین ڈالر سے زائد ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں